جسٹس شوکت عزیز صدیقی کیس میں نیا موڑ سامنے آیا ہے شوکت صدیقی نے عدالت میں سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کے حوالے سے نیا انکشاف کیا ہے انکے مطابق جب خفیہ اداروں کے آفیسرز مجھ سے ملاقات کیلئے آئے تو اسکے بعد میں نے اس وقت کے چیف جسٹس ثاقب نثار سے ملاقات کیلئے چار مرتبہ وقت مانگا تاکہ انکو خفیہ اداروں کے آفیسرز کیساتھ ملاقات کے متعلق بتایا جاسکے لیکن ثاقب نثار نے مجھے ملنے کیلئے وقت نہیں دیا

شوکت عزیز صدیقی کے وکیل حامد خان کیمطابق اس وقت کے چیف جسٹس ثاقب نثار نے جسٹس شوکت عزیز صدیقی کو اسلئے ملاقات کا وقت نہیں دیا کیونکہ پھر انکوائری کرنا پڑتی اور اگر انکوائری ہوتی تو پھر جرنیلوں کو عدالت میں بلانا پڑتا اور اگر عدالت میں بلایا جاتا اور اگر وہ عدالت میں آتے تو ان پر جرح بھی کرنا پڑتی اور ہم سب جانتے ہیں کہ اس ملک میں جرنیلوں کو عدالتی کاروائی کے لیے بلانا بہت مشکل کام ہے

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here