spot_img

Columns

Columns

News

پاک فوج نے جنرل (ر) فیض حمید کے خلاف انکوائری کا آغاز کر دیا

پاک فوج نے سابق ڈائریکٹر جنرل آئی ایس آئی جنرل (ر) فیض حمید کے خلاف نجی ہاوسنگ سوسائٹی کے مالک کی درخواست پر انکوائری کا آغاز کر دیا ہے، جنرل (ر) فیض حمید پر الزام ہے کہ انہوں نے نجی ہاؤسنگ سوسائٹی کے خلاف دورانِ ملازمت اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کیا تھا۔

عمران خان کی حکومت سعودی عرب نے گِرائی تھی، شیر افضل مروت

عمران خان کی حکومت سعودی عرب نے گِرائی تھی، سعودی عرب اور امریکہ دو ممالک تھے جن کے تعاون سے رجیم چینج آپریشن مکمل ہوا، سعودی عرب کی جانب سے پاکستان کیلئے معاشی تعاون بھی اسی پلاننگ کا حصہ ہے۔راہنما تحریکِ انصاف شیر افضل مروت

فیض آباد دھرنا کمیشن ایک مذاق تھا، اس کمیشن کی کوئی وقعت نہیں ہے۔ وزیرِ دفاع خواجہ آصف

جنرل (ر) باجوہ نے مجھے دھمکی دی ہے کہ میں نے باتیں بیان کیں تو ٹانگوں پر کھڑا نہ ہو سکوں گا، جنرل (ر) باجوہ اور جنرل (ر) فیض حمید فیض آباد دھرنا کمیشن میں پیش نہیں ہوئے، فیض آباد دھرنا کمیشن ایک مذاق تھا، اس کمیشن کی کوئی وقعت نہیں ہے۔

سعودی عرب پاکستان کی معاشی ترقی کیلئے اپنا کردار ادا کرے گا، سعودی وزیرِ خارجہ شہزادہ فیصل

سعودی عرب پاکستان کی معاشی ترقی کیلئے اپنا کردار ادا کرے گا، جلد سرمایہ کاری میں پیش رفت ہو گی۔ سعودی وزیرِ خارجہسعودی عرب کی جانب سے بڑی سرمایہ کاری کا خیر مقدم کرتے ہیں، سعودی سرمایہ کاروں کو تمام سہولیات فراہم کی جائیں گی۔ وزیرِ خارجہ اسحاق ڈار

جنرل (ر) باجوہ میرے خلاف ہیروئن کے جعلی کیس میں براہِ راست ملوث تھا، رانا ثناء اللّٰہ

میرے خلاف ہیروئن کے جعلی کیس میں جنرل (ر) قمر جاوید باجوہ براہِ راست ملوث تھا، عمران خان نے پارلیمنٹ کی منظوری کے بغیر اگست میں ہی جنرل (ر) باجوہ کو توسیع دے دی تھی، میاں نواز شریف نے کہا کہ اب محاذ آرائی بےسود ہے۔
Editorialعمران خان، سلمان رشدی کا وکیل اور سانحہ نو مئی کے بعد...
spot_img

عمران خان، سلمان رشدی کا وکیل اور سانحہ نو مئی کے بعد عالمی عدالتوں میں ریاست پاکستان کیخلاف مقدمات کی گونج

سابق وزیراعظم عمران خان اور ان کی جماعت پاکستان تحریکِ انصاف (پی ٹی آئی) عالمی عدالتوں میں پاکستان کے خلاف مقدمات میں بیرسٹر جیفری رابرٹسن کی خدمات حاصل کرنے کے فیصلے سے پیچھے ہٹنے پر مجبور ہو گئے۔

The Editorial Desk
The Editorial Desk
Views from The Thursday Times' editorial desk.
spot_img

سابق وزیراعظم عمران خان اور ان کی جماعت پاکستان تحریکِ انصاف (پی ٹی آئی) عالمی عدالتوں میں پاکستان کے خلاف مقدمات میں بیرسٹر جیفری رابرٹسن کی خدمات حاصل کرنے کے فیصلے سے پیچھے ہٹنے پر مجبور ہو گئے۔

تحریکِ انصاف کے چیئرمین عمران خان نے پاکستان کے خلاف عالمی عدالتوں سے رجوع کرنے کا فیصلہ کیا تو عوامی حلقوں میں ایک نئی بحث نے جنم لیا اور سوشل میڈیا صارفین کی بہت بڑی تعداد نے اس فیصلہ کو پاکستان کیلئے جگ ہنسائی کا سبب قرار دیا، اس صورتحال میں عمران خان کی جانب سے اسلام کیخلاف ”شیطانی آیات“ نامی کتاب لکھنے والے سلمان رشدی کا مقدمہ لڑنے والے بیرسٹر جیفری رابرٹسن کو وکیل اور نمائندہ مقرر کرنے کی خبر نے جلتی پر تیل کا کام کیا۔

سیاسی راہنماؤں اور مذہبی و سماجی شخصیات کی جانب سے اس فیصلے پر عمران خان اور تحریکِ انصاف کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا اور اس فیصلے کو 9 مئی کے بعد ایک بار پھر ریاست پر حملہ قرار دیا گیا، پاکستان مسلم لیگ نواز کی چیف آرگنائزر مریم نواز شریف نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنا پیغام جاری کیا جس میں انہوں نے مؤقف اختیار کیا کہ سلمان رشدی کا مقدمہ لڑنے والے شخص کو اپنا وکیل مقرر کرنے کا فیصلہ عمران خان کی منافقت کو ظاہر کرتا ہے

شدید عوامی ردعمل کے باعث اب تحریکِ انصاف کی جانب سے جیفری رابرٹسن کی خدمات حاصل کرنے کا فیصلہ ختم کرنے کا اعلان سامنے آیا تاہم عمران خان اور تحریکِ انصاف کی جانب سے پاکستان کے خلاف عالمی عدالتوں سے رجوع کرنے کا فیصلہ تاحال برقرار ہے جبکہ عمران خان کے وکلاء نے یہ بیان بھی سامنے آیا ہے کہ عمران خان تمام سیاسی جماعتوں اور اداروں سے بات چیت کیلئے تیار ہیں۔

یاد رہے کہ برطانیہ اور آسٹریلیا کی دوہری شہریت کے حامل بیرسٹر جیفری رابرٹسن اسلام مخالف کتاب ”شیطانی آیات“ کے مصنف سلمان رشدی کے خلاف توہینِ رسالت کے مقدمہ میں نہ صرف اس کا دفاع کر چکے ہیں بلکہ سلمان رشدی کو اپنے گھر میں پناہ بھی دے چکے ہیں اور اس بات کا اعتراف وہ خود اپنی ایک تحریر میں کر چکے ہیں۔

اسرائیل کے ساتھ دیرینہ تعلقات رکھنے والے جیفری رابرٹسن عالمی سطح پر کرپٹ حکمرانوں، عالمی مالیاتی فراڈز میں ملوث افراد، جنگی جرائم کے ملزمان اور دہشتگردی کے مقدمات میں ملزمان کی وکالت کرنے کیلئے مشہور ہیں۔

Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments

Read more

نواز شریف کو سی پیک بنانے کے جرم کی سزا دی گئی

نواز شریف کو ایوانِ اقتدار سے بے دخل کرنے میں اس وقت کی اسٹیبلشمنٹ بھرپور طریقے سے شامل تھی۔ تاریخی شواہد منصہ شہود پر ہیں کہ عمران خان کو برسرِ اقتدار لانے کے لیے جنرل باجوہ اور جنرل فیض حمید نے اہم کردارادا کیا۔

ثاقب نثار کے جرائم

Saqib Nisar, the former Chief Justice of Pakistan, is the "worst judge in Pakistan's history," writes Hammad Hassan.

عمران خان کا ایجنڈا

ہم یہ نہیں چاہتے کہ ملک میں افراتفری انتشار پھیلے مگر عمران خان تمام حدیں کراس کر رہے ہیں۔

لوٹ کے بدھو گھر کو آ رہے ہیں

آستین میں بت چھپائے ان صاحب کو قوم کے حقیقی منتخب نمائندوں نے ان کا زہر نکال کر آئینی طریقے سے حکومت سے نو دو گیارہ کیا تو یہ قوم اور اداروں کی آستین کا سانپ بن گئے اور آٹھ آٹھ آنسو روتے ہوئے ہر کسی پر تین حرف بھیجنے لگے۔

حسن نثار! جواب حاضر ہے

Hammad Hassan pens an open letter to Hassan Nisar, relaying his gripes with the controversial journalist.

#JusticeForWomen

In this essay, Reham Khan discusses the overbearing patriarchal systems which plague modern societies.
error: