spot_img

Columns

News

پاک فوج نے جنرل (ر) فیض حمید کے خلاف انکوائری کا آغاز کر دیا

پاک فوج نے سابق ڈائریکٹر جنرل آئی ایس آئی جنرل (ر) فیض حمید کے خلاف نجی ہاوسنگ سوسائٹی کے مالک کی درخواست پر انکوائری کا آغاز کر دیا ہے، جنرل (ر) فیض حمید پر الزام ہے کہ انہوں نے نجی ہاؤسنگ سوسائٹی کے خلاف دورانِ ملازمت اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کیا تھا۔

عمران خان کی حکومت سعودی عرب نے گِرائی تھی، شیر افضل مروت

عمران خان کی حکومت سعودی عرب نے گِرائی تھی، سعودی عرب اور امریکہ دو ممالک تھے جن کے تعاون سے رجیم چینج آپریشن مکمل ہوا، سعودی عرب کی جانب سے پاکستان کیلئے معاشی تعاون بھی اسی پلاننگ کا حصہ ہے۔راہنما تحریکِ انصاف شیر افضل مروت

فیض آباد دھرنا کمیشن ایک مذاق تھا، اس کمیشن کی کوئی وقعت نہیں ہے۔ وزیرِ دفاع خواجہ آصف

جنرل (ر) باجوہ نے مجھے دھمکی دی ہے کہ میں نے باتیں بیان کیں تو ٹانگوں پر کھڑا نہ ہو سکوں گا، جنرل (ر) باجوہ اور جنرل (ر) فیض حمید فیض آباد دھرنا کمیشن میں پیش نہیں ہوئے، فیض آباد دھرنا کمیشن ایک مذاق تھا، اس کمیشن کی کوئی وقعت نہیں ہے۔

سعودی عرب پاکستان کی معاشی ترقی کیلئے اپنا کردار ادا کرے گا، سعودی وزیرِ خارجہ شہزادہ فیصل

سعودی عرب پاکستان کی معاشی ترقی کیلئے اپنا کردار ادا کرے گا، جلد سرمایہ کاری میں پیش رفت ہو گی۔ سعودی وزیرِ خارجہسعودی عرب کی جانب سے بڑی سرمایہ کاری کا خیر مقدم کرتے ہیں، سعودی سرمایہ کاروں کو تمام سہولیات فراہم کی جائیں گی۔ وزیرِ خارجہ اسحاق ڈار

جنرل (ر) باجوہ میرے خلاف ہیروئن کے جعلی کیس میں براہِ راست ملوث تھا، رانا ثناء اللّٰہ

میرے خلاف ہیروئن کے جعلی کیس میں جنرل (ر) قمر جاوید باجوہ براہِ راست ملوث تھا، عمران خان نے پارلیمنٹ کی منظوری کے بغیر اگست میں ہی جنرل (ر) باجوہ کو توسیع دے دی تھی، میاں نواز شریف نے کہا کہ اب محاذ آرائی بےسود ہے۔
EditorialHypocrisy, dual standards, and selective solidarity
spot_img

Hypocrisy, dual standards, and selective solidarity

Ukrainian President Volodymyr Zelenskyy's unequivocal support for Israel's right to self-defense lay bare stark hypocrisy when juxtaposed against his nation's own struggle against Russian aggression

The Editorial Desk
The Editorial Desk
Views from The Thursday Times' editorial desk.
spot_img

In light of recent turmoil enveloping Jerusalem, Ukrainian President Volodymyr Zelenskyy took to X (formerly Twitter) to assert his unambiguous support for Israel’s right to self-defense following a deadly Hamas attack. He denounced terrorism as a “crime against humanity” and affirmed that the right to self-defense is unquestionable. These remarks, though typical from a head of state, reveal a deeper layer of contradiction in the form of hypocrisy when juxtaposed against the ongoing Russo-Ukrainian War.

Zelenskyy’s endorsement of self-defense reflects a long-standing Israeli doctrine of self-reliance in security matters. Interestingly, he has harbored aspirations for Ukraine to adopt a similar stance, aligning with Israel’s security doctrine.

However, the pathway to such self-reliance for Ukraine appears to be strewn with obstacles. Zelenskyy’s discontent with Israel’s reluctance to provide Ukraine with anti-missile systems to counter Russian aggression has been palpable. His dismay deepened with Israel’s refusal to sanction Russia, despite his appeals for assistance in Ukraine’s struggle against Russian encroachment.

 

The intricacies of these interactions lay bare a stark hypocrisy. Zelenskyy’s unequivocal support for Israel’s right to self-defense seems to be at odds with his plea for aid in Ukraine’s own quest for self-defense. The contentious issue of self-defense becomes even more convoluted when the aggressors in one scenario are the victims in another, and vice versa. Israel, finding itself under attack from Hamas, claims its right to self-defense, a stance Ukraine and Zelenskyy strongly support. Yet, Israel’s actions in Palestine and its refusal to acknowledge Palestine’s right to self-defense mirror Russia’s actions in Ukraine.

The irony of Zelenskyy’s staunch support for Israel’s right to self-defense, while simultaneously battling Russian aggression at home, elucidates the absurdity of what the president is fighting for.

Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
spot_img

Read more

جنرل باجوہ اور جنرل فیض نے تحریکِ عدم اعتماد لانے کیلئے کہا تھا، مولانا فضل الرحمٰن

جنرل باجوہ اور جنرل فیض نے تحریکِ عدم اعتماد لانے کیلئے کہا تھا، یہ تحریک پیپلز پارٹی نے چلائی تھی لیکن میں اس کے حق میں نہ تھا، تحریکِ انصاف کو فائدہ پہنچانے کیلئے ہمارے ساتھ دھاندلی کی گئی، اب فیصلے میدان میں ہوں گے۔

عمران خان 2.0: بلاول بھٹو عمران خان ثانی بننے میں مصروف عمل

بلاول بھٹو عمران خان ثانی بننے میں مصروفِ عمل ہیں، ان کی تقاریر میں عمران خان کے روایتی انداز کی جھلک دکھائی دیتی ہے، وہ برق رفتاری سے تُو تَڑاق والی زبان بولتے نظر آ رہے ہیں، عمران خان کی پھیلائی پولرائزیشن کے باعث منقسم معاشرہ مزید نفرتوں کا متحمل نہیں ہو سکتا۔

Remembering Benazir Bhutto, the pioneer of modern Pakistani politics

Benazir Bhutto, twice Prime Minister of Pakistan, was the first woman to lead a democratic government in a Muslim-majority country. Her landmark tenures, from 1988-1990 and 1993-1996, were marked by significant political and social reforms.

پاک فوج نے جنرل (ر) فیض حمید کے خلاف انکوائری کا آغاز کر دیا

پاک فوج نے سابق ڈائریکٹر جنرل آئی ایس آئی جنرل (ر) فیض حمید کے خلاف نجی ہاوسنگ سوسائٹی کے مالک کی درخواست پر انکوائری کا آغاز کر دیا ہے، جنرل (ر) فیض حمید پر الزام ہے کہ انہوں نے نجی ہاؤسنگ سوسائٹی کے خلاف دورانِ ملازمت اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کیا تھا۔

عمران خان کی حکومت سعودی عرب نے گِرائی تھی، شیر افضل مروت

عمران خان کی حکومت سعودی عرب نے گِرائی تھی، سعودی عرب اور امریکہ دو ممالک تھے جن کے تعاون سے رجیم چینج آپریشن مکمل ہوا، سعودی عرب کی جانب سے پاکستان کیلئے معاشی تعاون بھی اسی پلاننگ کا حصہ ہے۔راہنما تحریکِ انصاف شیر افضل مروت

فیض آباد دھرنا کمیشن ایک مذاق تھا، اس کمیشن کی کوئی وقعت نہیں ہے۔ وزیرِ دفاع خواجہ آصف

جنرل (ر) باجوہ نے مجھے دھمکی دی ہے کہ میں نے باتیں بیان کیں تو ٹانگوں پر کھڑا نہ ہو سکوں گا، جنرل (ر) باجوہ اور جنرل (ر) فیض حمید فیض آباد دھرنا کمیشن میں پیش نہیں ہوئے، فیض آباد دھرنا کمیشن ایک مذاق تھا، اس کمیشن کی کوئی وقعت نہیں ہے۔
error: