28.2 C
Islamabad
Sat, 13 August 2022

Pakistani Banks Now Charging for ATM Receipts

Sign up to the Thursday Roundup for free

The best editorials & latest news straight to your inbox

Your data will be processed in accordance with GDPR guidelines
- Advertisement -

Engineer | + other posts

Saad Ullah Butt is an engineer with an MBA and a passion for standardisation and innovative technology, quality systems and crypto have been a natural attraction to Saad. He carries more than a decade of experience in developing and handling QA, HR and HSE management systems for FMCG companies. Saad loves to spend time reading a good book or playing with his fish. He can be contacted at saadullahbutt@gmail.com

In a recent unexpected move, several Pakistani banks have started charging PKR2.5 (USD0.015) for ATM receipts.

In Schedule of Charges

The move has caught bank customers unaware, with many claiming that the move was unannounced. The news has caught the attention of social media, with people sharing that the charges have been introduced without knowledge.

Only a few banks have started this practice, and even lesser have informed their customers. Those that have published this news only did by mentioning it in their Schedule of Charges. The lengthy document details every charge or fee that the customer will pay on the banking services. With such complexity in the document, it is easy to ignore a small sentence and customers usually do not read the document in the first place.

As yet, the banks that have started charging for ATM receipt seem to be the participants of the 1Link network. 1Link is a collection of 38 banks in Pakistan that allows interoperability of ATMs and cards. Till date, the following banks are charging for the receipts:

  • Allied Bank
  • Askari Bank
  • Bank Alfalah
  • Bank Al-Habib
  • Faysal Bank
  • Habib Metropolitan Bank
  • JS Bank
  • Meezan Bank
  • Standard Chartered
  • United Bank

Banks Fleecing Customers

At first, customers believed that the fee was introduced under the directives of State Bank of Pakistan, the state regulator. However, SBP has clarified that it has not issued any instructions in this regard. The charge introduced by the banks have been defended by the financial institutions as a move under the “Go Green” campaign to reduce the carbon footprint. It is not uncommon to see areas around ATMs littered with receipts as people simply check their balance or confirm a transaction and throw it away.

This is not the first time Pakistani banks have used different tactics to make money. Though the move is justified by them under the garb of an environment friendly action, the history says a lot different. If these institutes are so sensitive about the environment, they should first consider shifting to a pure digital medium for their documentation. Computers and digital ledgers are used, but they still rely on rolls of papers for record keeping. 

Furthermore, fleecing their customers is nothing new. An irony in itself, nearly every bank charges their customers anywhere from PKR50 to PKR 75 (USD0.316~USD0.474) per month for SMS alerts, even though the regulator has made it mandatory for them to provide this service free of cost. In an open defiance to authorities, these banks further charge taxes on the services.

If you are a customer using 1Link system to access service from an ATM that is not your bank’s, you will be charged 18.75 per transaction. SBP has already penalized banks to the tune of PKR770 million for this illegal move. The move has been challenged in court and as is common for the legal system of Pakistan, the decision on this matter is pending in courts for some years now.

As banks try to find unique ways to fleece their customers and authorities clamp down on technologies and methods that are cheaper, faster and more secure, the citizens are forced to move a cash economy as the cost of being banked keeps rising.

- Advertisement -

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here
This site is protected by reCAPTCHA and the Google Privacy Policy and Terms of Service apply.

RELATED ARTICLES

FRESH OFF THE PRESS

ریاست بچاؤ

موجودہ حکومت ریاست بچاؤ کا نعرہ لگا کر بھی وہی کچھ کر رہی ھے جس طرح عمران خان چور ڈاکو کا نعرہ لگا کر در حقیقت اس کے الٹ کر رہا تھا۔ آگر ریاست بچاؤ ہی موجودہ اتحادی حکومت کا مقصد و مدعا ھے تو پھر بتایا جائے کہ اس سلسلے میں عملی طور پر کونسے اقدامات اٹھائے گئے ہیں۔ اور اب تک مثبت نتائج کے حصول کا تناسب کیا ھے۔

کرپشن کا تسلسل

اگر کسی کو غصہ چڑھتا ھے یا ناراض ہوتا ھے تو ناراض ہونے کی بجائے اپنی کرتوتوں کو ٹھیک کر لے ورنہ غصہ بھی ہونے دیں اور ناراض بھی ہونے دیں۔ کیا فرق پڑتا ہے۔

مجرمانہ جاہلیت

گاڑی کے ریڈی ایٹر کا مسئلہ ہے اور میں ورکشاپ میں ہوں۔ ڈیئر تم سپر مارکیٹ آ جاو میں گاڑی ٹھیک کروا کے تھوڑی دیر میں پہنچ رہا ہوں۔

⁨تعلیم و تربیت کے ساتھ شخصیت کا ہونا ہر ایک کی ضرورت ہے!⁩

تجربہ کاروں اور پریکٹیشنرز کے ساتھ تعلیم اور تربیت انسانوں کو خوش کرتی ہے۔ تعلیم علم اور عقل کو بڑھاتی ہے، اور جب بات افراد کی ہو تو علم ایک جامع زندگی گزارنے کے لیے ناگزیر ہے۔ اس دنیا میں بچہ جب آنکھ کھولتا ہے تو وہ مقدس، معصوم اور جاہل ہوتا ہے، اسی لیے کہا جاتا ہے کہ بچہ خدا کا روپ ہے۔

بچالی ہے ریاست بھی سیاست بھی

یا تحریکِ انصاف کی حکومت کا خاتمہ اندھے کننویں میں چھلانگ لگانے کی سی حرکتِ مذبوحی تھی؟ ہر گز نہیں پی ڈی ایم کی قیادت بہت عرصے سے اس معاملے کا ہمہ جہتی جائزہ لے رہی تھی اور ہر پہلو سے اس کے نتائج اور عواقب پر غور کر رہی تھی۔جیسا کہ سابق وزیر داخلہ اس کا اعتراف کر چکے ہیں کہ انھیں ”بتا“ دیا گیا تھا کہ آپ کی حکومت جارہی ہے۔

⁨کراچی ریڈ زون میں ”سپریم کورٹ آف پولیس“⁩

ماحول خاصہ گرما گرم تھا۔ درخواست گزاروں کا آنا جانا جاری تھا۔ مائیک آن اور تقریریں،مذمتیں ہو رہی تھیں۔ آنسو بہہ رہی تھیں،دل دھڑک رہی تھیں۔ گہماگہمی کی سما تھیں لیکن یکجہتی کرنے والے حسابی تھے اور ہر رنگ و نسل کے لوگ تھے۔ البتہ مدعی اور مؤقل کا موقف اور مطالبہ ایک ہی تھا۔ چہرے ہزار۔

⁨کیا پرویز رشید ناقابلِ معافی ہیں؟⁩

ستر کی دہائی میں گارڈن کالج راولپنڈی میں طلباء سیاست کے میدان میں قدم رکھنے والے پرویز رشید درحقیقت ایک ناقابلِ تسخیر سیاسی نظریہ کا نام ہیں۔ چی گویرا سے متاثر انقلابی نظریات رکھنے والے پرویز رشید طالبعلمی کے دور سے ہی ایک غیر طبقاتی معاشرے کے قیام کا خواب آنکھوں میں سجائے ہوئے ہیں۔

ایمیلائیڈوسس: وہ نایاب بیماری جس میں پرویز مشرف مبتلا ہیں

صدر جنرل ریٹائرڈ مشرف ایمیلائیڈوسس کی وجہ سے ہسپتال  میں داخل ہیں جہاں وہ زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا ہیں۔ ایمیلائیڈوسس کیا ہے اور یہ کیسے ہوتی ہے؟

بجٹ اور توانائی کے مسائل

الانہ بجٹ آج کی دنیا کا ایک ایسا معروف عمل ہے جس سے کوئی بھی نا آشنا نہیں ہوگا۔ حکومتیں ہر سال اپنی آمد وخرچ کا ایک حساب تیار کرتی ہیں اور سال بھر اس کے مطابق آمدن حاصل کرتی اور بجٹ میں مقرر کردہ اہداف کے مطابق خرچ کرتی ہیں۔

⁨خوف و کتاب کے بیچ زندگی⁩

والے بلوچ طلبا کتاب کو بیگ میں رکھ کر جائے تو لاپتہ ہونے کا خوف پیچھے کرتے ہوئے ہمسفر بن کے جاتا ہے۔ لٹریچر کی رومانوی داستان ہو یا سائنسی علوم سب کچھ خوف کے سائے میں پڑھتا ہے۔