spot_img

Columns

News

ہم تحریکِ انصاف کے ساتھ رابطے بڑھانا اور تلخیاں کم کرنا چاہتے ہیں، مولانا فضل الرحمٰن

تحریک انصاف کے ساتھ رابطے بڑھانا اور تلخیاں کم کرنا چاہتے ہیں، آئینِ پاکستان کی کوئی حیثیت نہیں رہی، پارلیمنٹ کی اہمیت ختم ہو چکی جبکہ جمہوریت اپنا مقدمہ ہار رہی ہے، بات چیت کیلئے اعتماد کی ضرورت ہوتی ہے۔

آئرش وزیراعظم نے فلسطین کو بطور ریاست تسلیم کرنے کا اعلان کر دیا

آئرلینڈ نے فلسطین کو بطور ریاست تسلیم کرنے کا اعلان کر دیا، ناورے اور سپین بھی فلسطین کو بطور ریاست تسلیم کر رہے ہیں جبکہ اسرائیل نے فوری طور پر آئرلینڈ اور ناروے سے اپنے سفیروں کو واپس بلا لیا ہے۔

سینیٹر فیصل واوڈا نے سینیٹ میں جسٹس اطہر من اللّٰہ کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کر دیا

جج اطہر من اللّٰہ نے مجھے پراکسی کہا، ایک جج کیسے یہ جرأت کر سکتا ہے کہ وہ سینیٹر کو پراکسی کہے؟ جج نے ایوان کی توہین کی ہے، میں سینیٹ سے اطہر من اللّٰہ کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کرتا ہوں، سینیٹر فیصل واوڈا۔

عالمی عدالتِ انصاف نے بنجمن نیتن یاہو اور یحییٰ سنوار کے وارنٹ گرفتاری طلب کر لیے

عالمی عدالتِ انصاف (آئی سی سی) نے اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو، اسرائیلی وزیرِ دفاع یوو گیلنٹ اور حماس راہنماؤں یحییٰ سنوار، محمد دیاب المصیری و اسماعیل ہنیہ کے وارنٹ گرفتاری طلب کر لیے۔

ایرانی صدر ابراہیم رئیسی ہیلی کاپٹر حادثے میں جاں بحق ہو گئے

ایرانی صدر ابراہیم رئیسی کا ہیلی کاپٹر ایرانی علاقہ آذربائیجان میں گر کر تباہ، حادثہ میں ایرانی صدر، وزیرِ خارجہ حسین امیر، مشرقی آذربائجان کے گورنر ملک رحمتی اور صوبہ میں ایرانی صدر کے نمائندے آیت اللہ علی سمیت تمام افراد جاں بحق ہو گئے۔
OpinionEnglishArguments must stay alive
spot_img

Arguments must stay alive

I arranged Arshad's first interview with Imran Khan. With his demise, another argument dies today. We may agree or disagree with an argument but arguments must stay alive. This is freedom of expression, writes former PTI media head Ahmad Jawad

Ahmad Jawad
Ahmad Jawad
Ahmad Jawad is the former Information Secretary for the Pakistan Tehreek-i-Insaf. He has represented Pakistan at a number of international forums alongside Imran Khan, CJ Ather Minullah, Ahsan Iqbal, Najam Sethi, and others. Jawad has also previously been an anchorperson for PTV.
spot_img

With the sad demise of journalist Arshad Sharif, another argument dies today. We may agree or disagree with an argument but arguments must stay alive. This is freedom of expression.

Also read: Public vandalism and criminal prosecution

Arshad Sharif was a member of a WhatsApp group of mine. He was the son of the now-retired Commander Muhammad Sharif. His father was a simple man, having specialised in signals (Long C). He was my instructor during my journey with the Pakistani Navy. I arranged Arshad’s first interview with Imran Khan during my time as the Pakistan Tehreek-e-Insaf’s Head of Central Media in 2012. I took him to Bani Gala despite stiff opposition from within the party’s leadership. Just before entering the room, Imran Khan interrogated me as to why I had arranged an interview with Arshad in spite of his severe criticism against the PTI. I replied succintly, stating “we have two options: either to resolve with those who criticise us or to quarrel with them. I recommend the former.” Imran agreed with me. In those days, Imran Khan used to absorb arguments. The interview was long, and it was tough. Arshad Sharif smartly made two parts of this interview. Back then, an interview with Imran Khan by any journalist meant for the instant success of that journalist.

The murder of a journalist, an attack on a journalist, or even a ban on a journalist is a stage where arguments die down against power, conspiracy, or fascism. Pakistan’s 156th position in the global media freedom index encompasses a history of journalists being killed or kidnapped or injured or banned in Pakistan. This one is perhaps the first of its kind to take place outside Pakistan. In our history, facts behind any such incident never come out. If the attempted murder of Hamid Mir had been properly investigated and facts had come out, the untimely fate of Arshad Sharif might have been different.

Our political differences should never overcome the need of freedom of expression in our society. I am sad to learn of Arshad’s death, even if I might have disagreed on his thoughts and ideas; however, I believe he had every right to follow his beliefs. Despite all speculations, accusations are not solutions. A thorough investigation must be carried out. Facts must come out if we don’t want to see another journalist meeting a similar fate. In the end, every death reminds us that life is a short journey, which must ride on truth and principles, and not any agenda, any hatred, any bias, or any lie. The assassin must know his fate cannot be different than the one who he has murdered. Those who are murdered leave the world as an innocent victim, and sometimes even as a Shaheed if they are not a hardcore criminal.

May Allah rest Arshad’s soul in eternal peace.

Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
spot_img

Read more

جنرل باجوہ اور جنرل فیض نے تحریکِ عدم اعتماد لانے کیلئے کہا تھا، مولانا فضل الرحمٰن

جنرل باجوہ اور جنرل فیض نے تحریکِ عدم اعتماد لانے کیلئے کہا تھا، یہ تحریک پیپلز پارٹی نے چلائی تھی لیکن میں اس کے حق میں نہ تھا، تحریکِ انصاف کو فائدہ پہنچانے کیلئے ہمارے ساتھ دھاندلی کی گئی، اب فیصلے میدان میں ہوں گے۔

عمران خان 2.0: بلاول بھٹو عمران خان ثانی بننے میں مصروف عمل

بلاول بھٹو عمران خان ثانی بننے میں مصروفِ عمل ہیں، ان کی تقاریر میں عمران خان کے روایتی انداز کی جھلک دکھائی دیتی ہے، وہ برق رفتاری سے تُو تَڑاق والی زبان بولتے نظر آ رہے ہیں، عمران خان کی پھیلائی پولرائزیشن کے باعث منقسم معاشرہ مزید نفرتوں کا متحمل نہیں ہو سکتا۔

Remembering Benazir Bhutto, the pioneer of modern Pakistani politics

Benazir Bhutto, twice Prime Minister of Pakistan, was the first woman to lead a democratic government in a Muslim-majority country. Her landmark tenures, from 1988-1990 and 1993-1996, were marked by significant political and social reforms.

ہم تحریکِ انصاف کے ساتھ رابطے بڑھانا اور تلخیاں کم کرنا چاہتے ہیں، مولانا فضل الرحمٰن

تحریک انصاف کے ساتھ رابطے بڑھانا اور تلخیاں کم کرنا چاہتے ہیں، آئینِ پاکستان کی کوئی حیثیت نہیں رہی، پارلیمنٹ کی اہمیت ختم ہو چکی جبکہ جمہوریت اپنا مقدمہ ہار رہی ہے، بات چیت کیلئے اعتماد کی ضرورت ہوتی ہے۔

آئرش وزیراعظم نے فلسطین کو بطور ریاست تسلیم کرنے کا اعلان کر دیا

آئرلینڈ نے فلسطین کو بطور ریاست تسلیم کرنے کا اعلان کر دیا، ناورے اور سپین بھی فلسطین کو بطور ریاست تسلیم کر رہے ہیں جبکہ اسرائیل نے فوری طور پر آئرلینڈ اور ناروے سے اپنے سفیروں کو واپس بلا لیا ہے۔

سینیٹر فیصل واوڈا نے سینیٹ میں جسٹس اطہر من اللّٰہ کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کر دیا

جج اطہر من اللّٰہ نے مجھے پراکسی کہا، ایک جج کیسے یہ جرأت کر سکتا ہے کہ وہ سینیٹر کو پراکسی کہے؟ جج نے ایوان کی توہین کی ہے، میں سینیٹ سے اطہر من اللّٰہ کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کرتا ہوں، سینیٹر فیصل واوڈا۔
error: