Columns

News

تحریکِ انصاف نے آئی ایم ایف کو خط لکھ دیا، نیوز ایجنسی رائٹرز

تحریکِ انصاف نے آئی ایم ایف کو خط لکھ کر پاکستان کے ساتھ معاہدہ کو عام انتخابات میں دھاندلی کی تحقیقات اور سیاسی استحکام سے مشروط کرنے کا مطالبہ کر دیا۔

بینک آف امریکا نے پاکستان کے ڈالر بانڈز کا درجہ بڑھا کر ہیوی ویٹ کرنے کی تجویز دے دی، جریدہ بلومبرگ

بینک آف امریکا نے پاکستان کا درجہ مارکیٹ ویٹ سے بڑھا کر ہیوی ویٹ کرنے کے تجویز دے دی، پاکستان میں عام انتخابات نے سیاسی بےیقینی کو کم کیا جس سے پاکستان کے ڈالر بانڈز میں عالمی سرمایہ کاروں کی دلچسپی میں اضافہ ہوا ہے۔

عمران خان اور بشریٰ بی بی پر 190 ملین پاؤنڈز کرپشن کیس میں فردِ جرم عائد کر دی گئی

اڈیالہ جیل راولپنڈی میں احتساب عدالت نے 190 ملین پاؤنڈز کرپشن کیس میں سابق چیئرمین تحریکِ انصاف عمران خان اور ان کی اہلیہ بشریٰ بی بی پر فردِ جرم عائد کر دی، ملزمان کا صحتِ جرم سے انکار، سماعت 6 مارچ تک ملتوی کر دی گئی۔

قومی اسمبلی کا اجلاس 29 فروری کو صبح 10 بجے ہو گا

صدر عارف علوی کے انکار کے بعد قومی اسبملی سیکرٹریٹ نے قومی اسمبلی کا اجلاس 29 فروری کو صبح 10 بجے بلا لیا۔

مریم نواز شریف پنجاب کی پہلی خاتون وزیرِ اعلٰی منتخب ہو گئیں

رف مسلم لیگ (ن) کی وزیرِ اعلٰی نہیں ہوں بلکہ پنجاب کے 12 کروڑ عوام کی وزیرِ اعلٰی ہوں، میرے دل میں کسی کیلئے انتقام کا جذبہ نہیں ہے، مجھے اس میں آپ سب کا ساتھ چاہیے، انشاءاللّٰه ہم ایک بہتر پنجاب بنائیں گے۔
Analysisعمران خان کی طرح کوئی بھی اس قدر ڈھٹائی کے ساتھ جھوٹ...

عمران خان کی طرح کوئی بھی اس قدر ڈھٹائی کے ساتھ جھوٹ نہیں بول سکتا، شہباز شریف

سیاسی پختگی رکھنے والا کوئی بھی شخص اس قدر ڈھٹائی کے ساتھ جھوٹ نہیں بول سکتا جس طرح عمران خان جھوٹ بولتے ہیں، عمران خان نے کہا کہ ان کے پاس سائفر موجود ہے لیکن پھر کہا کہ وہ مجھ سے کہیں کھو گیا ہے اور اب امریکہ میں ایک نیوز ویب سائٹ نے اس کو شائع کر دیا ہے۔

spot_img

اسلام آباد—سابق وزیراعظم میاں شہباز شریف نے وزارتِ عظمیٰ کے منصب سے سبکدوش ہونے سے قبل برطانوی اخبار “دی گارڈین” کو دیئے گئے انٹرویو میں کہا کہ تشدد کرنا میری ڈکشنری میں ہی نہیں ہے، ذاتی انتقام کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا، عمران خان کے خلاف مقدمات میں قانون اپنا راستہ اختیار کرے گا۔

وزیراعظم شہباز شریف کا کہنا تھا کہ جب عمران خان وزیراعظم کی کرسی پر بیٹھے تھے تو ہمارے ساتھ ناروا سلوک رکھا گیا اور جیل مینوئل کی خلاف ورزی کی گئی، ہمیں بری طرح وکٹمائز کیا گیا لیکن ہم انتقام پر یقین نہیں رکھتے، عمران خان کے خلاف مقدمات میں قانون، متعلقہ ادارے اور عدالتیں خود اپنا راستہ اختیار کریں گی۔

دی گارڈین کے مطابق سابق کرکٹر عمران خان کو کرپشن کا جرم ثابت ہونے پر 5 اگست کو لاہور میں ان کی رہائش گاہ سے گرفتار کیا گیا، عدالت کی جانب سے عمران خان کو کرپٹ پریکٹس میں ملوث ہونے پر تین سال قید کی سزا سنائی گئی جبکہ آئینِ پاکستان کے مطابق عمران خان پانچ برس کیلئے سیاست کے میدان سے بھی باہر ہو چکے ہیں۔

میاں شہباز شریف نے سائفر کے متعلق ایک سوال کے جواب میں کہا کہ سفارتی گفتگو میں عمران خان کی حکومت کو گرانے یا ہمیں اقتدار میں لانے کی کسی سازش کا کوئی ذکر نہیں ہے، عمران خان نے اس معاملہ میں حقائق کو توڑ مروڑ کر بیان کیا اور سازش کے جھوٹے الزامات عائد کیے۔

بطور وزیراعظم دیئے گئے انٹرویو میں میاں شہباز شریف کا کہنا تھا کہ سیاسی پختگی رکھنے والا کوئی بھی شخص اس قدر ڈھٹائی کے ساتھ جھوٹ نہیں بول سکتا جس طرح عمران خان جھوٹ بولتے ہیں، عمران خان نے کہا کہ ان کے پاس سائفر موجود ہے لیکن پھر کہا کہ وہ مجھ سے کہیں کھو گیا ہے اور اب امریکہ میں ایک نیوز ویب سائٹ نے اس کو شائع کر دیا ہے۔

برطانوی اخبار کے مطابق تین بار پاکستان کے وزیراعظم منتخب ہونے والے میاں نواز شریف کے چھوٹے بھائی میاں شہباز شریف نے 9 اگست کو بطور وزیراعظم صدرِ مملکت کو قومی اسمبلی تحلیل کرنے کا مشورہ دیا جس سے نگران سیٹ اپ کیلئے راہ ہموار ہو گئی، ایک غیر معروف سیاستدان انوار الحق کاکڑ نے سوموار کو نگران وزیراعظم کے عہدے کا حلف اٹھایا جبکہ عام انتخابات میں تاخیر کے واضح امکانات موجود ہیں۔

وزیراعظم شہباز شریف نے “دی گارڈین” سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم 2018 کے عام انتخابات میں دھاندلی کا شکار ہوئے اور اس کی وجوہات سب جانتے ہیں، ہمیں امید ہے کہ یہ غلطی اب دوہرائی نہیں جائے گی۔

دی گارڈین کے مطابق پاکستان کی فوج کی جانب سے سویلین سیاستدانوں پر اپنی طاقت کا استعمال کرتے ہوئے اثر و رسوخ برقرار رکھنے کی ایک طویل تاریخ موجود ہے، عمران خان کو 2018 کے عام انتخابات میں فوج کی حمایت حاصل تھی اور فوج کے ساتھ تعلقات خراب ہونے کو ہی عمران خان کے اقتدار سے بےدخل ہونے کی وجہ قرار دیا جاتا ہے جبکہ اقتدار سے نکلنے کے بعد اب عمران خان کو کرپشن سے لے کر اقدامِ قتل تک سنگین الزامات پر مبنی کم و بیش ڈیڑھ سو مقدمات کا سامنا ہے۔

عمران خان کی جماعت “تحریکِ انصاف” پر ممکنہ پابندی کے متعلق سوال کے جواب میں وزیراعظم شہباز شریف کا کہنا تھا کہ اس بارے میں فیصلہ عدالت نے ہی کرنا ہے، مجھے ذاتی طور پر کسی بھی سیاسی جماعت پر پابندی کی کوئی خواہش نہیں ہے۔

میاں شہباز شریف نے آفیشل سیکریٹ ایکٹ میں ترامیم کے متعلق سوال کے جواب میں کہا کہ اس کا مقصد دہشتگردوں سے تفتیش کرنے والے سیکیورٹی اہلکاروں کی زندگیوں کا تحفظ کرنا ہے، یہ قوانین میری جماعت یا کسی کے بھی خلاف نہیں ہوں گے، ایسے الزامات بےبنیاد ہیں کہ یہ قوانین کسی مخصوص جماعت کے خلاف بنائے گئے ہیں۔

Read more

میاں نواز شریف! یہ ملک بہت بدل چکا ہے

مسلم لیگ ن کے لوگوں پر جب عتاب ٹوٹا تو وہ ’نیویں نیویں‘ ہو کر مزاحمت کے دور میں مفاہمت کا پرچم گیٹ نمبر 4 کے سامنے لہرانے لگے۔ بہت سوں نے وزارتیں سنبھالیں اور سلیوٹ کرنے ’بڑے گھر‘ پہنچ گئے۔ بہت سے لوگ کارکنوں کو کوٹ لکھپت جیل کے باہر مظاہروں سے چوری چھپے منع کرتے رہے۔ بہت سے لوگ مریم نواز کو لیڈر تسیلم کرنے سے منکر رہے اور نواز شریف کی بیٹی کے خلاف سازشوں میں مصروف رہے۔

Celebrity sufferings

Reham Khan details her explosive marriage with Imran Khan and the challenges she endured during this difficult time.

نواز شریف کو سی پیک بنانے کے جرم کی سزا دی گئی

نواز شریف کو ایوانِ اقتدار سے بے دخل کرنے میں اس وقت کی اسٹیبلشمنٹ بھرپور طریقے سے شامل تھی۔ تاریخی شواہد منصہ شہود پر ہیں کہ عمران خان کو برسرِ اقتدار لانے کے لیے جنرل باجوہ اور جنرل فیض حمید نے اہم کردارادا کیا۔

ثاقب نثار کے جرائم

Saqib Nisar, the former Chief Justice of Pakistan, is the "worst judge in Pakistan's history," writes Hammad Hassan.

عمران خان کا ایجنڈا

ہم یہ نہیں چاہتے کہ ملک میں افراتفری انتشار پھیلے مگر عمران خان تمام حدیں کراس کر رہے ہیں۔

لوٹ کے بدھو گھر کو آ رہے ہیں

آستین میں بت چھپائے ان صاحب کو قوم کے حقیقی منتخب نمائندوں نے ان کا زہر نکال کر آئینی طریقے سے حکومت سے نو دو گیارہ کیا تو یہ قوم اور اداروں کی آستین کا سانپ بن گئے اور آٹھ آٹھ آنسو روتے ہوئے ہر کسی پر تین حرف بھیجنے لگے۔

حسن نثار! جواب حاضر ہے

Hammad Hassan pens an open letter to Hassan Nisar, relaying his gripes with the controversial journalist.

#JusticeForWomen

In this essay, Reham Khan discusses the overbearing patriarchal systems which plague modern societies.
spot_img
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
error: