spot_img

Columns

News

آئرش وزیراعظم نے فلسطین کو بطور ریاست تسلیم کرنے کا اعلان کر دیا

آئرلینڈ نے فلسطین کو بطور ریاست تسلیم کرنے کا اعلان کر دیا، ناورے اور سپین بھی فلسطین کو بطور ریاست تسلیم کر رہے ہیں جبکہ اسرائیل نے فوری طور پر آئرلینڈ اور ناروے سے اپنے سفیروں کو واپس بلا لیا ہے۔

سینیٹر فیصل واوڈا نے سینیٹ میں جسٹس اطہر من اللّٰہ کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کر دیا

جج اطہر من اللّٰہ نے مجھے پراکسی کہا، ایک جج کیسے یہ جرأت کر سکتا ہے کہ وہ سینیٹر کو پراکسی کہے؟ جج نے ایوان کی توہین کی ہے، میں سینیٹ سے اطہر من اللّٰہ کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کرتا ہوں، سینیٹر فیصل واوڈا۔

عالمی عدالتِ انصاف نے بنجمن نیتن یاہو اور یحییٰ سنوار کے وارنٹ گرفتاری طلب کر لیے

عالمی عدالتِ انصاف (آئی سی سی) نے اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو، اسرائیلی وزیرِ دفاع یوو گیلنٹ اور حماس راہنماؤں یحییٰ سنوار، محمد دیاب المصیری و اسماعیل ہنیہ کے وارنٹ گرفتاری طلب کر لیے۔

ایرانی صدر ابراہیم رئیسی ہیلی کاپٹر حادثے میں جاں بحق ہو گئے

ایرانی صدر ابراہیم رئیسی کا ہیلی کاپٹر ایرانی علاقہ آذربائیجان میں گر کر تباہ، حادثہ میں ایرانی صدر، وزیرِ خارجہ حسین امیر، مشرقی آذربائجان کے گورنر ملک رحمتی اور صوبہ میں ایرانی صدر کے نمائندے آیت اللہ علی سمیت تمام افراد جاں بحق ہو گئے۔

وزیرِ اعلٰی پنجاب مریم نواز شریف نے ’’نواز شریف آئی ٹی سٹی‘‘ کا سنگ بنیاد رکھ دیا

وزیر اعلٰی پنجاب مریم نواز شریف نے پاکستان کے پہلے انفارمیشن ٹیکنالوجی منصوبے ’’نواز شریف آئی ٹی سٹی‘‘ کا افتتاح کر دیا۔ آئی ٹی سٹی کا نام نواز شریف کے نام پر رکھا گیا ہے کیونکہ نواز شریف ہی جدید پاکستان کے بانی ہیں۔
spot_img
Analysisجنرل (ر) فیض حمید کے ”کارنامے“ بزبانِ ابصار عالم

جنرل (ر) فیض حمید کے ”کارنامے“ بزبانِ ابصار عالم

جنرل (ر) فیض حمید نے بطور ڈائریکٹر جنرل آئی ایس آئی ایک نجی ہاؤسنگ سوسائٹی کی ہزاروں ایکڑ زمین پر قبضہ کرنے کیلئے اس کے مالک کو سسر اور نجی ہاؤسنگ سوسائٹی کے دو افسران سمیت اغواء کروایا جبکہ مغویوں کو پراپرٹی ٹرانسفر کے کاغذات پر دستخط کرنے کیلئے بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔

spot_img

اسلام آباد (تھرسڈے ٹائمز) — سابق چیئرمین پیمرا اور معروف صحافی ابصار عالم نے ٹویٹر (ایکس) پر اپنے پیغامات میں انٹر سروسز انٹیلیجنس کے سابق سربراہ جنرل (ر) فیض حمید پر سنگین الزامات عائد کر دیئے ہیں۔

ابصار عالم نے انکشاف کیا یے کہ جنرل (ر) فیض حمید نے بطور ڈائریکٹر جنرل آئی ایس آئی اسلام آباد اور راولپنڈی کے سنگم پر واقع ایک نجی ہاؤسنگ سوسائٹی کی ہزاروں ایکڑ زمین پر قبضہ کرنے کیلئے اس کے مالک کو سسر اور نجی ہاؤسنگ سوسائٹی کے دو افسران سمیت اغواء کروایا جبکہ مغویوں کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بھی بنایا گیا۔

معروف صحافی کے مطابق 12 مئی 2017 کو اسلام آباد کے علاقہ ایف 11 میں فجر کی نماز سے کچھ دیر قبل رینجرز اور انٹر سروسز انٹیلیجنس کے سینکڑوں افسران اور مسلح اہلکاروں نے نجی ہاؤسنگ سوسائٹی کے مالک کے گھر کی دیواروں کو پھلانگ کر اور دروازے توڑ کر وہاں رہائش پذیر تمام افراد کو یرغمال بنایا اور انہیں ہاتھ پاؤں باندھ کر تشدد کا نشانہ بھی بنایا گیا۔

سابق چیئرمین پیمرا نے انکشاف کیا ہے کہ بچوں اور بچیوں سمیت گھر میں خاندان کے 8 افراد کو یرغمال بنانے کے بعد نجی ہاؤسنگ سوسائٹی کے مالک اور اس کے سسر کو تشدد کا نشانہ بنایا گیا، پھر منہ پر کپڑا چڑھایا گیا اور رینجرز کی گاڑیوں میں پھینکا گیا جبکہ گھر کا قیمتی سامان، کیش کرنسی، کاغذات اور لائسنس یافتہ اسلحہ ٹرکوں میں ڈالا گیا اور پھر انہیں کشمیر ہائی وے پر گولڑہ کے قریب ایک کمپلیکس کے تہہ خانے میں منتقل کر دیا گیا جبکہ ایف 11 میں نجی ہاؤسنگ سوسائٹی کے دو افسران کے گھروں پر بھی دھاوا بولا گیا اور انہیں بھی اغواء کیا گیا۔

ابصار عالم کے مطابق نجی ہاؤسنگ سوسائٹی کے مالک، اس کے سسر اور دو ایگزیکٹوز کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا گیا اور بعدازاں نجی ہاؤسنگ سوسائٹی کے مالک کو پراپرٹی ٹرانسفر کے کاغذات پر دستخط کرنے کا کہا گیا جبکہ کاغذات کے مطابق پراپرٹی کا 50 فیصد ”نجف“ نامی شخص کے نام اور بقیہ 50 فیصد ”معصومہ“ نامی ایک خاتون کے نام منتقل کیا جانا تھا تاہم نجی ہاؤسنگ سوسائٹی کے مالک نے ان کاغذات پر دستخط کرنے سے انکار کر دیا۔

معروف صحافی نے انکشاف کیا ہے کہ پراپرٹی ٹرانسفر کے کاغذات پر دستخط نہ کرنے پر نجی ہاؤسنگ سوسائٹی کے مالک کو مزید تشدد کا نشانہ بنایا گیا اور پھر 780 اے کے تحت دہشتگردی اور دھماکہ خیز مواد رکھنے کے الزامات پر مبنی ایف آئی آر درج کروا کر سی ٹی ڈی راولپنڈی کے حوالہ کر دیا گیا، تین برس تک مقدمہ چلایا گیا اور بالآخر انسدادِ دہشتگردی عدالت نے باعزت بری کر دیا اور بعدازاں اسلام آباد ہائی کورٹ نے بھی انسدادِ دہشتگردی عدالت کا فیصلہ برقرار رکھا جبکہ یہ معاملہ اب سپریم کورٹ تک پہنچ چکا ہے۔

پیمرا کے سابق چیئرمین کے مطابق ایف 11 میں اس کارروائی سے قبل رینجرز اور آئی ایس آئی کے اہلکاروں نے پنجاب اسمبلی کے اقلیتی رکن رمیش سنگھ اروڑا کے گھر پر بھی دھاوا بولا اور رمیش سنگھ کی اہلیہ، بچوں، بیوہ بہن اور بیوہ بہن کے بچوں کو بیڈ رومز سے گھسیٹ کر نکالا گیا لیکن بعدازاں انہیں رینجرز اور آئی ایس آئی کے افسران اور اہلکاروں کو معلوم ہوا کہ وہ غلطی سے رمیش سنگھ اروڑا کے گھر میں گھس گئے ہیں۔

ابصار عالم کا کہنا ہے کہ رمیش سنگھ نے اس وقت کے وزیرِ داخلہ چوہدری نثار علی خان کو خط لکھ کر آئی ایس آئی اور رینجرز کے ان افسران اور اہلکاروں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا جنہوں نے رمیش سنگھ کے گھر میں گھس کر ان کے اہلِ خانہ کو ہراساں کیا۔

Read more

میاں نواز شریف! یہ ملک بہت بدل چکا ہے

مسلم لیگ ن کے لوگوں پر جب عتاب ٹوٹا تو وہ ’نیویں نیویں‘ ہو کر مزاحمت کے دور میں مفاہمت کا پرچم گیٹ نمبر 4 کے سامنے لہرانے لگے۔ بہت سوں نے وزارتیں سنبھالیں اور سلیوٹ کرنے ’بڑے گھر‘ پہنچ گئے۔ بہت سے لوگ کارکنوں کو کوٹ لکھپت جیل کے باہر مظاہروں سے چوری چھپے منع کرتے رہے۔ بہت سے لوگ مریم نواز کو لیڈر تسیلم کرنے سے منکر رہے اور نواز شریف کی بیٹی کے خلاف سازشوں میں مصروف رہے۔

Celebrity sufferings

Reham Khan details her explosive marriage with Imran Khan and the challenges she endured during this difficult time.

نواز شریف کو سی پیک بنانے کے جرم کی سزا دی گئی

نواز شریف کو ایوانِ اقتدار سے بے دخل کرنے میں اس وقت کی اسٹیبلشمنٹ بھرپور طریقے سے شامل تھی۔ تاریخی شواہد منصہ شہود پر ہیں کہ عمران خان کو برسرِ اقتدار لانے کے لیے جنرل باجوہ اور جنرل فیض حمید نے اہم کردارادا کیا۔

ثاقب نثار کے جرائم

Saqib Nisar, the former Chief Justice of Pakistan, is the "worst judge in Pakistan's history," writes Hammad Hassan.

عمران خان کا ایجنڈا

ہم یہ نہیں چاہتے کہ ملک میں افراتفری انتشار پھیلے مگر عمران خان تمام حدیں کراس کر رہے ہیں۔

لوٹ کے بدھو گھر کو آ رہے ہیں

آستین میں بت چھپائے ان صاحب کو قوم کے حقیقی منتخب نمائندوں نے ان کا زہر نکال کر آئینی طریقے سے حکومت سے نو دو گیارہ کیا تو یہ قوم اور اداروں کی آستین کا سانپ بن گئے اور آٹھ آٹھ آنسو روتے ہوئے ہر کسی پر تین حرف بھیجنے لگے۔

حسن نثار! جواب حاضر ہے

Hammad Hassan pens an open letter to Hassan Nisar, relaying his gripes with the controversial journalist.

#JusticeForWomen

In this essay, Reham Khan discusses the overbearing patriarchal systems which plague modern societies.
spot_img
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
error: