spot_img

Columns

News

عالمی عدالتِ انصاف نے بنجمن نیتن یاہو اور یحییٰ سنوار کے وارنٹ گرفتاری طلب کر لیے

عالمی عدالتِ انصاف (آئی سی سی) نے اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو، اسرائیلی وزیرِ دفاع یوو گیلنٹ اور حماس راہنماؤں یحییٰ سنوار، محمد دیاب المصیری و اسماعیل ہنیہ کے وارنٹ گرفتاری طلب کر لیے۔

ایرانی صدر ابراہیم رئیسی ہیلی کاپٹر حادثے میں جاں بحق ہو گئے

ایرانی صدر ابراہیم رئیسی کا ہیلی کاپٹر ایرانی علاقہ آذربائیجان میں گر کر تباہ، حادثہ میں ایرانی صدر، وزیرِ خارجہ حسین امیر، مشرقی آذربائجان کے گورنر ملک رحمتی اور صوبہ میں ایرانی صدر کے نمائندے آیت اللہ علی سمیت تمام افراد جاں بحق ہو گئے۔

وزیرِ اعلٰی پنجاب مریم نواز شریف نے ’’نواز شریف آئی ٹی سٹی‘‘ کا سنگ بنیاد رکھ دیا

وزیر اعلٰی پنجاب مریم نواز شریف نے پاکستان کے پہلے انفارمیشن ٹیکنالوجی منصوبے ’’نواز شریف آئی ٹی سٹی‘‘ کا افتتاح کر دیا۔ آئی ٹی سٹی کا نام نواز شریف کے نام پر رکھا گیا ہے کیونکہ نواز شریف ہی جدید پاکستان کے بانی ہیں۔

ہماری حکومت کا تختہ نہ الٹایا جاتا تو آج ہم ایشیاء سمیت پوری دنیا میں بہت آگے ہوتے، نواز شریف

ہماری حکومت کا تختہ نہ الٹایا جاتا تو آج ہم ایشیاء سمیت پوری دنیا میں سب سے آگے ہوتے، تین بندوں نے 25 کروڑ عوام کے منتخب وزیراعظم کو بیٹے سے تنخواہ نہ لینے پر نکال دیا، پھر ایک ایسا بندہ لایا گیا جس نے ملک میں تباہی مچا دی۔

نواز شریف کو 28 مئی (یومِ تکبیر) کو پاکستان مسلم لیگ (ن) کا صدر منتخب کیا جائے گا

پاکستان مسلم لیگ (ن) کی سینٹرل ورکنگ کمیٹی کا اجلاس؛ نواز شریف کو 28 مئی (یومِ تکبیر) کو پاکستان مسلم لیگ (ن) کا صدر منتخب کیا جائے گا، وزیراعظم شہباز شریف 28 مئی تک مسلم لیگ (ن) کے قائم مقام صدر نامزد۔
spot_img
Newsroomپاکستان کے دولخت ہونے کی بڑی وجہ غلط عدالتی فیصلہ تھا، جسٹس...

پاکستان کے دولخت ہونے کی بڑی وجہ غلط عدالتی فیصلہ تھا، جسٹس قاضی فائیز عیسیٰ

آئین میں سوموٹو کا لفظ استعمال نہیں نہیں ہوا، یہ شق سپریم کورٹ کو شرائط کے ساتھ بنیادی حقوق کے نفاذ کیلئے کوئی کام کرنے کا اختیار دیتی ہے، یہ شق دراصل ان مظلوموں کیلئے رکھی گئی تھی جو عدالت تو دور وکیل تک نہیں پہنچ سکتے، اس شق کو کسی ایک فرد کو فائدہ پہنچانے کیلئے استعمال نہیں کیا جانا چاہیے۔ میری رائے کے مطابق اس شق کا اختیار چیف جسٹس نہیں بلکہ سپریم کورٹ کے پاس ہے۔

spot_img

جسٹس قاضی فائیز عیسیٰ نے آئینِ پاکستان کی گولڈن جوبلی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آئینِ پاکستان جیسا تحفہ پھر نہیں ملے گا، ہم آئینِ پاکستان کی پچاسویں سالگرہ منا رہے ہیں، یہ آئین پاکستان کے ہر شہری کی دستاویز ہے، 10 اپریل 1973 کو مشترکہ طور پر اسے اپنایا گیا، ہم آئین کی تشریح کر سکتے ہیں، جب ناانصافی ہوتی ہے تو وہ زیادہ دیر تک نہیں ٹھہرتی۔

سپریم کورٹ کے سینئر ترین جج کا کہنا تھا کہ یہ کتاب صرف پارلیمان نہیں بلکہ لوگوں کیلئے بھی اہم ہے، اس کتاب میں لوگوں کے حقوق ہیں، پاکستان ٹوٹنے کی بڑی وجہ غلط عدالتی فیصلہ تھا، ملک اچانک نہیں ٹوٹا بلکہ اس کیلئے بیج بوئے گئے، پاکستان توڑنے کا زہریلا بیج جسٹس منیر نے بویا جو پروان چڑھا اور دسمبر 1971 میں ملک دو ٹکڑے ہو گیا۔ ذوالفقار علی بھٹو کو ایک ووٹ سے سزائے موت دی گئی، نمبر گیم سے جھوٹ سچ میں تبدیل نہیں ہو سکتا، کوئی فیصلہ غلط ہے تو وہ غلط ہی رہے گا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کے قیام کی سوچ دراصل مسلمانوں کیلئے استحصال سے پاک ملک تھی جہاں وہ اپنی مرضی سے رہ سکیں، آل انڈیا مسلم لیگ کا یہ پیغام بند کمرے میں نہیں بلکہ برصغیر کے کونے کونے تک پہنچایا گیا، دنیا کی سب سے بڑی مسلم ریاست وجود میں آئی لیکن کام ادھورا رہ گیا، دستور ساز اسمبلی 7 سال تک کام کرتی رہی، آئین تیار ہونے کی نہج پر پہنچا تو ایک سرکاری ملازم نے آئین کو ٹھوکر مار دی۔

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے ڈکٹیٹر ایوب خان کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ 1956 کی دستور ساز اسمبلی میں کوئی انتخابات نہیں ہوئے اور وہ 2 سال میں دم توڑ گئی، ایک سرکاری ملازم نے فیصلہ کیا کہ میں عقلِ کل ہوں اور 1958 میں مارشل لاء نافذ ہو گیا، اس عقلِ کل نے 1962 کا آئین خود بنا لیا اور جمہوریت کو ختم کر دیا، سرکاری ملازم کے خیال میں عوام باشعور نہیں تھے۔

انہوں نے ڈکٹیٹر ضیاء الحق کے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ 4 جولائی1977 کو ایک شخص نے جمہوریت اور آئین پر وار کیا اور 11 سال تک حکومت کی، پھر ایک جہاز حادثہ میں اس کا انتقال ہو گیا۔ یہاں جو بھی ڈکٹیٹر آتا ہے، کچھ عرصہ بعد خود کو دھوکہ دینے لگتا ہے کہ میں تو جمہوریت پسند ہوں۔ ڈکٹیٹر ریفرنڈم کرواتا ہے تو نتائج 98 فیصد تک پہنچ جاتے ہیں حالانکہ پورے عوامی زور و شور سے ہونے والے انتخابات کے نتائج بھی 60 فیصد سے زیادہ نہیں آتے۔

قاضی فائز عیسیٰ کا 12 اکتوبر 1999 کی فوجی بغاوت کے متعلق کہنا تھا کہ ایک آدمی نے سوچا اس سے بہتر کوئی نہیں لہذا اس نے اقتدار پر قبضہ کر لیا اور پھر اس نے دوسرا وار 3 نومبر 2007 میں کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ پرویز مشرف نے خود ہی اپنے آپ کو آئینی تحفظ دے دیا۔

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے آئین کی شق 184(3) کے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ آئین میں سوموٹو کا لفظ استعمال نہیں نہیں ہوا، یہ شق سپریم کورٹ کو شرائط کے ساتھ بنیادی حقوق کے نفاذ کیلئے کوئی کام کرنے کا اختیار دیتی ہے، یہ شق دراصل ان مظلوموں کیلئے رکھی گئی تھی جو عدالت تو دور وکیل تک نہیں پہنچ سکتے، اس شق کو کسی ایک فرد کو فائدہ پہنچانے کیلئے استعمال نہیں کیا جانا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ میری رائے کے مطابق اس شق کا اختیار سپریم کورٹ کے پاس ہے مگر میرے دوستوں کی رائے ہے کہ سوموٹو کا اختیار چیف جسٹس کا ہے، اگر آپ میری بات سے اختلاف رکھتے ہیں تو آئین کی کسی شق سے مجھے جواب دیں، ایک رائے یہ بھی ہے کہ جب بھی 184(3) کا استعمال ہو تو سپریم کورٹ کے تمام ججز اس کو سنیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ تاریخ نے ہمیں 7 بار سبق دیا مگر ہم نے تاریخ سے کبھی کچھ نہیں سیکھا، اگر ہم تاریخ سے سبق نہیں سیکھیں گے تو تاریخ خود کو دوہراتی رہے گی۔

Read more

میاں نواز شریف! یہ ملک بہت بدل چکا ہے

مسلم لیگ ن کے لوگوں پر جب عتاب ٹوٹا تو وہ ’نیویں نیویں‘ ہو کر مزاحمت کے دور میں مفاہمت کا پرچم گیٹ نمبر 4 کے سامنے لہرانے لگے۔ بہت سوں نے وزارتیں سنبھالیں اور سلیوٹ کرنے ’بڑے گھر‘ پہنچ گئے۔ بہت سے لوگ کارکنوں کو کوٹ لکھپت جیل کے باہر مظاہروں سے چوری چھپے منع کرتے رہے۔ بہت سے لوگ مریم نواز کو لیڈر تسیلم کرنے سے منکر رہے اور نواز شریف کی بیٹی کے خلاف سازشوں میں مصروف رہے۔

Celebrity sufferings

Reham Khan details her explosive marriage with Imran Khan and the challenges she endured during this difficult time.

نواز شریف کو سی پیک بنانے کے جرم کی سزا دی گئی

نواز شریف کو ایوانِ اقتدار سے بے دخل کرنے میں اس وقت کی اسٹیبلشمنٹ بھرپور طریقے سے شامل تھی۔ تاریخی شواہد منصہ شہود پر ہیں کہ عمران خان کو برسرِ اقتدار لانے کے لیے جنرل باجوہ اور جنرل فیض حمید نے اہم کردارادا کیا۔

ثاقب نثار کے جرائم

Saqib Nisar, the former Chief Justice of Pakistan, is the "worst judge in Pakistan's history," writes Hammad Hassan.

عمران خان کا ایجنڈا

ہم یہ نہیں چاہتے کہ ملک میں افراتفری انتشار پھیلے مگر عمران خان تمام حدیں کراس کر رہے ہیں۔

لوٹ کے بدھو گھر کو آ رہے ہیں

آستین میں بت چھپائے ان صاحب کو قوم کے حقیقی منتخب نمائندوں نے ان کا زہر نکال کر آئینی طریقے سے حکومت سے نو دو گیارہ کیا تو یہ قوم اور اداروں کی آستین کا سانپ بن گئے اور آٹھ آٹھ آنسو روتے ہوئے ہر کسی پر تین حرف بھیجنے لگے۔

حسن نثار! جواب حاضر ہے

Hammad Hassan pens an open letter to Hassan Nisar, relaying his gripes with the controversial journalist.

#JusticeForWomen

In this essay, Reham Khan discusses the overbearing patriarchal systems which plague modern societies.
spot_img
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
error: