spot_img

Columns

News

اقوام متحدہ رپورٹ؛ تحریک طالبان پاکستان سب سے بڑا دہشت گرد گروپ قرار

اقوام متحدہ نے تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) کو سب سے بڑا دہشت گرد گروپ قرار دے دیا۔ کالعدم ٹی ٹی پی پاکستان کے اندر شہریوں اور سیکیورٹی فورسز کیخلاف دہشت گردی کی کارروائیوں کے لیے افغان سرزمین کو مسلسل استعمال کر رہی ہے۔

شہباز شریف ہمارے ایم این ایز کو اغواء کرنے کیلئے انٹیلیجنس ایجنسیز کا استعمال کر رہے ہیں، عمر ایوب

شہباز شریف ہمارے ایم این ایز کو اغواء کرنے کیلئے آئی ایس آئی، ایم آئی اور آئی بی کو استعمال کر رہے ہیں، آج ہمارے ایم این اے امیر سلطان کو اغواء کیا گیا ہے، انٹیلیجنس ایجنسیز کے سربراہوں کو چاہیے کہ وہ سیاسی معاملات میں مداخلت سے باز رہیں۔

Pakistan seals US$7bn deal with IMF to transform and stabilise economy once and for all

Building on the 2023 Stand-by Arrangement, IMF staff and Pakistani authorities have reached a staff-level agreement on a 37-month Extended Fund Facility of about US$7 billion, aiming to cement macroeconomic stability, strengthen fiscal and monetary policy, broaden the tax base, improve SOE management, enhance competition, secure investment, enhance human capital, and expand social protection.

عمران خان اور بشریٰ بی بی کو توشہ خانہ ریفرنس میں گرفتار کر لیا گیا

نیب نے سابق وزیراعظم عمران خان اور ان کی اہلیہ بشریٰ بی بی کی نئے توشہ خانہ ریفرنس میں گرفتاری ڈال دی، ڈپٹی ڈائریکٹر نیب محسن ہارون کی سربراہی میں نیب ٹیم نے دونوں ملزمان کو گرفتار کر لیا۔

جو سائل ہی نہیں تھا سپریم کورٹ نے اسکی دہلیز پر ہوم ڈیلیوری کرکے فیصلہ پہنچایا، خواجہ آصف

سپریم کورٹ نے آئین کو از سر نو تحریر کیا اور فیصلے کی ہوم ڈلیوری کی۔ یہ ہوم ڈلیوری اس فریق کو کی گئی ہے جو کیس میں فریق ہی نہیں تھا۔ آئین کو دوبارہ لکھنے، بدلنے اور ترمیم کرنے کا حق صرف پارلیمنٹ کے پاس ہے۔
spot_img
ScienceHealth‎خسرے کی پیچیدہ ترین شکل اور جان لیوا بیماری (ایس ایس پی...

‎خسرے کی پیچیدہ ترین شکل اور جان لیوا بیماری (ایس ایس پی ای) کیوں اور کیسے ہوتی ہے؟

ایس ایس پی ای ایک نایاب اور جان لیوا دماغی بیماری ہے، اس کا تعلق خسرہ کے انفیکشن سے ہے اور یہ کہنا درست ہو گا کہ یہ خسرے کی پیچیدہ ترین شکل ہے۔

spot_img

ایس ایس پی ای ایک نایاب اور جان لیوا دماغی بیماری ہے، اس کا تعلق خسرہ کے انفیکشن سے ہے اور یہ کہنا درست ہو گا کہ یہ خسرے کی پیچیدہ ترین شکل ہے۔ اس بیماری کی وجہ بچپن میں خسرے کی ویکسین کا نہ لگنا ہے۔ ترقی یافتہ ممالک میں چونکہ موثر ویکسینیشن ہوتی ہے لہذا وہاں اس بیماری کی شرح بھی کم ہے۔ یہ بیماری عام طور پر بچوں اور نوجوانوں کو متاثر کرتی ہے جبکہ اس کا شکار ہونے والوں میں خواتین کی نسبت مردوں کی تعداد زیادہ ہے۔ وہ بچے جنہیں دو سال سے کم عمر میں خسرے کا انفیکشن ہوتا ہے، ان میں اس بیماری کے پیدا ہونے کے امکانات زیادہ ہوتے ہیں۔

سباکیوٹ سکلیروزنگ پیننسفالائٹس (ایس ایس پی ای) کا سبب میوٹینٹ میزلز وائرس ہوتا ہے جو کہ وائرس کی ایک تبدیل شدہ شکل ہے اور یہ اصل وائرس کی بہ نسبت زیادہ خطرناک ہوتا ہے کیونکہ اصل وائرس دماغ کو نقصان نہیں پہنچاتا جبکہ یہ وائرس مریض کے دماغ میں مستقل سکونت پذیر ہو جاتا ہے لیکن اس کے باوجود بیماری کی علامات خسرے کے ابتدائی انفیکشن کے ٹھیک ہو جانے کے کئی سال بعد ظاہر ہونا شروع ہوتی ہیں۔ عام طور پر بیس سال سے کم عمر افراد میں علامات ظاہر ہو جاتی ہیں اور علامات ظاہر ہونے کے بعد ایک سے تین سال کے اندر مریض کی موت واقع ہو جاتی ہے۔

ماہرین کے مطابق اس بیماری کے چار مرحلے ہیں اور ہر مرحلہ پہلے سے زیادہ شدید اور سخت نوعیت کا ہوتا ہے۔ یہ وائرس سب سے پہلے مریض کے دماغ میں سوزش پیدا کرتا ہے جس سے دماغ کی بافتوں کو نقصان پہنچتا ہے اور نتیجتاً مریض کے مزاج، رویہ اور شخصیت میں تبدیلیاں پیدا ہوتی ہیں، وہ چڑچڑا ہو جاتا ہے اور اس کے ارتکاز میں کمی واقع ہوتی ہے جبکہ یادداشت اور علمی سرگرمیاں بھی متاثر ہوتی ہیں۔ اگلے مرحلہ میں وائرس دماغی خلیوں کو تباہ کرنا شروع کرتا ہے جس سے مریض کے پٹھے سخت ہو جاتے ہیں، اس کو دورے پڑنے لگتے ہیں جبکہ بولنے اور خوراک نگلنے میں مشکل ہوتی ہے یعنی ہم آہنگی نہیں رہتی۔ جب بیماری مزید بڑھتی ہے یعنی تیسرے مرحلہ میں پہنچتی ہے تو مریض کے دماغ میں زخم بن جاتے ہیں جس سے دماغ کی ساخت میں تبدیلی آ جاتی ہے اور دماغ کے مختلف حصوں کے درمیان سگنلز کی ترسیل میں بھی رکاوٹ پیدا ہونا شروع ہو جاتی ہے جبکہ اس کا نتیجہ بےشمار اعصابی بیماریوں کی شکل میں سامنے آتا ہے، یادداشت اور نظر ختم ہو سکتی ہیں اور دوروں کی شدت میں بھی اضافہ ہو جاتا ہے۔ آخری مرحلہ میں دماغ کے ایسے حصے جو دل اور پھیپھڑوں کو کنٹرول کرتے ہیں وہ تباہ ہو جاتے ہیں، مریض کومہ میں چلا جاتا ہے اور بالآخر اس کی موت واقع ہو جاتی ہے۔

بدقسمتی سے ابھی تک یہ لاعلاج بیماری ہے اور اس کی روک تھام کا واحد طریقہ یہی ہے کہ ایسی دوائیں استعمال کی جائیں جن سے مرض کی علامات کو کنٹرول اور مریض کے امیون سسٹم (دفاعی نظام) کو مضبوط کیا جا سکے اور مریض کی بہت زیادہ دیکھ بھال کی جائے۔ یہ بیماری خسرے کی بگڑی ہوئی اور پیچیدہ ترین شکل ہے۔ یہ بیماری ہر گز ڈیپریشن سے نہیں ہوتی۔ چند روز قبل لاہور میں اسی بیماری سے وفات پا جانے والے بچے “عمار” کے متعلق کچھ لوگوں کا یہ گمراہ کن مؤقف ہے کہ عمار کو ڈیپریشن کی وجہ سے یہ بیماری لاحق ہوئی حالانکہ اس بیماری کی وجوہات میں ڈیپریشن شامل نہیں ہے۔

ڈاکٹرز کے مطابق عمار سٹیج تھری یا فور (تیسرے یا چوتھے مرحلہ) کا مریض تھا، آخر یہ کیسے ممکن ہے کہ اس بات سے اس کے والدین لاعلم ہوں؟ یقیناً ڈاکٹرز نے والدین کو بچے (عمار) کی بیماری کی شدت اور اس کی ممکنہ وفات کے بارے میں آگاہ کیا ہو گا کیونکہ مرض کی اصل شدت یا نوعیت اور ممکنہ نتائج سے آگاہ کرنا ڈاکٹر کی ذمہ داری ہے۔ حیرت ہوتی ہے کہ ایک والد اپنے بچے کو ایسی خطرناک حالت میں چھوڑ کر فوجی تنصیبات اور ریاستی املاک پر حملہ کرنے کا سوچ بھی کیسے سکتا ہے، وہ کیسے اپنے بیٹے کو اس حالت میں چھوڑ کر ملکی قیادت کو دھمکیاں دے سکتا ہے جبکہ ہم سب جانتے ہیں کہ قوانین میں ایسے جرائم پر سخت سزائیں تجویز کی گئی ہیں۔

The contributor, Rukhsana Alam, has a PhD in Microbiology.

Read more

میاں نواز شریف! یہ ملک بہت بدل چکا ہے

مسلم لیگ ن کے لوگوں پر جب عتاب ٹوٹا تو وہ ’نیویں نیویں‘ ہو کر مزاحمت کے دور میں مفاہمت کا پرچم گیٹ نمبر 4 کے سامنے لہرانے لگے۔ بہت سوں نے وزارتیں سنبھالیں اور سلیوٹ کرنے ’بڑے گھر‘ پہنچ گئے۔ بہت سے لوگ کارکنوں کو کوٹ لکھپت جیل کے باہر مظاہروں سے چوری چھپے منع کرتے رہے۔ بہت سے لوگ مریم نواز کو لیڈر تسیلم کرنے سے منکر رہے اور نواز شریف کی بیٹی کے خلاف سازشوں میں مصروف رہے۔

Celebrity sufferings

Reham Khan details her explosive marriage with Imran Khan and the challenges she endured during this difficult time.

نواز شریف کو سی پیک بنانے کے جرم کی سزا دی گئی

نواز شریف کو ایوانِ اقتدار سے بے دخل کرنے میں اس وقت کی اسٹیبلشمنٹ بھرپور طریقے سے شامل تھی۔ تاریخی شواہد منصہ شہود پر ہیں کہ عمران خان کو برسرِ اقتدار لانے کے لیے جنرل باجوہ اور جنرل فیض حمید نے اہم کردارادا کیا۔

ثاقب نثار کے جرائم

Saqib Nisar, the former Chief Justice of Pakistan, is the "worst judge in Pakistan's history," writes Hammad Hassan.

عمران خان کا ایجنڈا

ہم یہ نہیں چاہتے کہ ملک میں افراتفری انتشار پھیلے مگر عمران خان تمام حدیں کراس کر رہے ہیں۔

لوٹ کے بدھو گھر کو آ رہے ہیں

آستین میں بت چھپائے ان صاحب کو قوم کے حقیقی منتخب نمائندوں نے ان کا زہر نکال کر آئینی طریقے سے حکومت سے نو دو گیارہ کیا تو یہ قوم اور اداروں کی آستین کا سانپ بن گئے اور آٹھ آٹھ آنسو روتے ہوئے ہر کسی پر تین حرف بھیجنے لگے۔

حسن نثار! جواب حاضر ہے

Hammad Hassan pens an open letter to Hassan Nisar, relaying his gripes with the controversial journalist.

#JusticeForWomen

In this essay, Reham Khan discusses the overbearing patriarchal systems which plague modern societies.
spot_img
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
error: