Columns

News

تحریکِ انصاف نے آئی ایم ایف کو خط لکھ دیا، نیوز ایجنسی رائٹرز

تحریکِ انصاف نے آئی ایم ایف کو خط لکھ کر پاکستان کے ساتھ معاہدہ کو عام انتخابات میں دھاندلی کی تحقیقات اور سیاسی استحکام سے مشروط کرنے کا مطالبہ کر دیا۔

بینک آف امریکا نے پاکستان کے ڈالر بانڈز کا درجہ بڑھا کر ہیوی ویٹ کرنے کی تجویز دے دی، جریدہ بلومبرگ

بینک آف امریکا نے پاکستان کا درجہ مارکیٹ ویٹ سے بڑھا کر ہیوی ویٹ کرنے کے تجویز دے دی، پاکستان میں عام انتخابات نے سیاسی بےیقینی کو کم کیا جس سے پاکستان کے ڈالر بانڈز میں عالمی سرمایہ کاروں کی دلچسپی میں اضافہ ہوا ہے۔

عمران خان اور بشریٰ بی بی پر 190 ملین پاؤنڈز کرپشن کیس میں فردِ جرم عائد کر دی گئی

اڈیالہ جیل راولپنڈی میں احتساب عدالت نے 190 ملین پاؤنڈز کرپشن کیس میں سابق چیئرمین تحریکِ انصاف عمران خان اور ان کی اہلیہ بشریٰ بی بی پر فردِ جرم عائد کر دی، ملزمان کا صحتِ جرم سے انکار، سماعت 6 مارچ تک ملتوی کر دی گئی۔

قومی اسمبلی کا اجلاس 29 فروری کو صبح 10 بجے ہو گا

صدر عارف علوی کے انکار کے بعد قومی اسبملی سیکرٹریٹ نے قومی اسمبلی کا اجلاس 29 فروری کو صبح 10 بجے بلا لیا۔

مریم نواز شریف پنجاب کی پہلی خاتون وزیرِ اعلٰی منتخب ہو گئیں

رف مسلم لیگ (ن) کی وزیرِ اعلٰی نہیں ہوں بلکہ پنجاب کے 12 کروڑ عوام کی وزیرِ اعلٰی ہوں، میرے دل میں کسی کیلئے انتقام کا جذبہ نہیں ہے، مجھے اس میں آپ سب کا ساتھ چاہیے، انشاءاللّٰه ہم ایک بہتر پنجاب بنائیں گے۔
Newsroomملک کو ایماندار ججز کی ضرورت ہے "عمراندار" ججز کی نہیں، مریم...

ملک کو ایماندار ججز کی ضرورت ہے “عمراندار” ججز کی نہیں، مریم نواز

اس ملک کو ایماندار ججز کی ضرورت ہے عمراندار ججز کی ضرورت نہیں ہے جسٹس مظاہر نقوی کو چاہیے کہ اخلاقی جرات کا مظاہرہ کریں استعفی دیں اور عدلیہ پر لگنے والے دھبے کو مٹائیں۔

spot_img

مسلم لیگ ن کی چیف آرگنائزر مریم نواز نے راولپنڈی میں ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایسا پہلی مرتبہ نہیں ہوا کہ نواز شریف کو تباہ حال پاکستان ملا ہے تاریخ گواہ ہے کہ ہر بار نواز شریف کو تباہ حال پاکستان دیا جاتا ہے اور جب وہ ٹھیک کرلیتا ہے تو اسے دفتر سے ہی نہیں بالکہ دیس سے بھی نکال دیا جاتا ہے مشکلات پیدا کر کے کوئی اور جاتا ہے لیکن ہر بار مشکلات  کو ٹھیک کرنے والا ایک ہی نام محمد نواز شریف ہے۔

مریم نواز نے کہا کہ نواز شریف خدمت میں مصروف رہا اور ایک وہ تھا جو گھڑیاں چوری کرنے میں مصروف رہا ایسے ہی پاکستان کا یہ حال نہیں ہوا کیونکہ وہ گھڑیاں چوری کرنے میں مصروف رہا۔

ن لیگی لیڈر نے کہا کہ جب عمران خان نہیں تھا نواز شریف تھا  تو پاکستان میں روٹی دو سے پانچ روپے تھی آٹا ینتیس روپے کلو گھی ایک سو چالیس چینی پچپن روپے کلوسبزیاں چند روپے کلو تھیں لیکن جب سے عمران خان آیا اسکے بعد مہنگائی جانے کا نام ہی نہیں لے رہی۔

چیف آرگنائزر مسلم لیگ ن نے کہا کہ لوگ کہتے ہیں  مسلم لیگ ن کے پاس نوجوان نہیں ہیں لیکن اس الیکشن میں پتہ چلے گا کہ نوجوانوں کی سب سے بڑی تعداد مسلم لیگ ن کے پاس ہے۔

مریم نواز نے کہا کہ آئی ایم ایف سے مذاکرات میں عمران خان کو بٹھانا چاہیے تھا اور قوم کو بتانا چاہیے تھا کہ قوم کو مہنگائی کی دلدل میں پھنسا کر زمان پارک کے بنکر میں چھپ کر بیٹھا ہوا یہی عمران خان ہے اس موقع پر مریم نواز نے شرکا سے سوال کیا کہ جنگل میں آگ لگانے والے کو کٹہرے میں کھڑا کرنا چاہیے یا آگ بجھانے والے کو؟

مریم نواز نے مزید کہا کہ ملک کا حال صرف آئی ایم ایف کیوجہ سے نہیں ہوا بالکہ اس خاتون کیوجہ سے ہوا جس کو خاتون خانہ کہتا تھا وہ اصل میں خاتون “کھانا” ہے۔

چیف آرگنائزر ن لیگ نے کہا کہ اس ملک کو ایماندار ججز کی ضرورت ہے “عمراندار” ججز کی ضرورت نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ جسٹس مظاہر نقوی کو چاہیے کہ اخلاقی جرات کا مظاہرہ کریں استعفی دیں اور عدلیہ پر لگنے والے دھبے کو مٹائیں۔ عدلیہ کو چاہیے کہ ایسے عناصر فیض کے چیلے چانٹوں کا احتساب کریں جو اسکے جانے کے بعد بھی اسکا کام کررہے ہیں۔ یاد رکھنا ایسے ججز کا نام بھی تاریخ میں ایسے ہی آئے گا جیسے بابا زحمت کا آتا ہے ایسے ججز کو باقی ماندہ زندگی منہ چھپا کر گزارنا پڑتی ہے۔

ن لیگی لیڈر نے کہا کہ عمران خان پر تمام کیسز کے بعد عدالت بلاتی ہے تو جواب میں یا ٹانگ کا پلستر دکھا دیتا ہے یا کہتا ہے میں بزرگ آدمی ہوں مجھے نہ بلاو۔ انہوں نے کہا کہ وہ قانون کے ہاتھ جو نواز شریف کیلئے فولاد کے ہوتے تھے آج عمران خان کیلئے موم کے کیوں بن گئے اسے عدالت بلا بلا کر تھک جاتی ہے لیکن وہ پیش نہیں ہوتا یہ سہولتکاری نواز شریف کیلئے نہیں صرف عمران خان کیلئے ہورہی ہے۔

مریم نواز کا کہنا تھا کہ اللہ تعالی کی شان دیکھیں نواز شریف کی بیماری کا مذاق اڑانے والا آج ہر بات میں اپنا پلستر دکھا رہا ہے کہ دیکھو میری ٹانگ ٹوٹی ہوئی ہے۔

اس موقع پر مریم نواز نے کہا کہ ہم لوگ کئی کئی ماہ جیل کاٹ کر سزائے موت کے قیدیوں کی چکی میں رہ کر آئے اللہ کا کرم ہے لیکن ایک دن نہیں روئے وہ جو تمہارے لوگ دو دن جیل رہنے کے بعد رونے لگ گئے پہلے انکا رونا دھونا بند کرواو جیل بعد میں بھر لینا۔ مجھے میری چودہ برس کی بیٹی  اور میرے والد کے سامنے گرفتار کیا جو خود قیدی تھا میری بیٹی روتی رہ گئی لیکن میں نے کہا گبھرانا نہیں میں نے اپنے والد سے کہا گبھرانا نہیں اور یہ دو دن جیل میں رہنے کے بعد رونا شروع کردیتے ہیں۔

چیف آرگنائزر ن لیگ نے کہا کہ لوگوں کو چور چور کہنا والا پاکستان کی تاریخ کی سب سے بڑا چور نکلا ڈکیت نکلا ملک میں آگ لگا کر اپنی جیبیں بھر کر آج زمان پارک کے بنکر میں بزدلوں کی طرح چھپ کر بیٹھا ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بنکر میں ڈر کر چھپ کر بیٹھے ہو تمہارا کیا خیال ہے تم بچے رہو گے یاد رکھنا جس دن رانا ثنا اللہ نے تمہیں گرفتار کرنے کا فیصلہ کرلیا تمہیں بچانے والا کوئی نہیں ہوگا۔

Read more

میاں نواز شریف! یہ ملک بہت بدل چکا ہے

مسلم لیگ ن کے لوگوں پر جب عتاب ٹوٹا تو وہ ’نیویں نیویں‘ ہو کر مزاحمت کے دور میں مفاہمت کا پرچم گیٹ نمبر 4 کے سامنے لہرانے لگے۔ بہت سوں نے وزارتیں سنبھالیں اور سلیوٹ کرنے ’بڑے گھر‘ پہنچ گئے۔ بہت سے لوگ کارکنوں کو کوٹ لکھپت جیل کے باہر مظاہروں سے چوری چھپے منع کرتے رہے۔ بہت سے لوگ مریم نواز کو لیڈر تسیلم کرنے سے منکر رہے اور نواز شریف کی بیٹی کے خلاف سازشوں میں مصروف رہے۔

Celebrity sufferings

Reham Khan details her explosive marriage with Imran Khan and the challenges she endured during this difficult time.

نواز شریف کو سی پیک بنانے کے جرم کی سزا دی گئی

نواز شریف کو ایوانِ اقتدار سے بے دخل کرنے میں اس وقت کی اسٹیبلشمنٹ بھرپور طریقے سے شامل تھی۔ تاریخی شواہد منصہ شہود پر ہیں کہ عمران خان کو برسرِ اقتدار لانے کے لیے جنرل باجوہ اور جنرل فیض حمید نے اہم کردارادا کیا۔

ثاقب نثار کے جرائم

Saqib Nisar, the former Chief Justice of Pakistan, is the "worst judge in Pakistan's history," writes Hammad Hassan.

عمران خان کا ایجنڈا

ہم یہ نہیں چاہتے کہ ملک میں افراتفری انتشار پھیلے مگر عمران خان تمام حدیں کراس کر رہے ہیں۔

لوٹ کے بدھو گھر کو آ رہے ہیں

آستین میں بت چھپائے ان صاحب کو قوم کے حقیقی منتخب نمائندوں نے ان کا زہر نکال کر آئینی طریقے سے حکومت سے نو دو گیارہ کیا تو یہ قوم اور اداروں کی آستین کا سانپ بن گئے اور آٹھ آٹھ آنسو روتے ہوئے ہر کسی پر تین حرف بھیجنے لگے۔

حسن نثار! جواب حاضر ہے

Hammad Hassan pens an open letter to Hassan Nisar, relaying his gripes with the controversial journalist.

#JusticeForWomen

In this essay, Reham Khan discusses the overbearing patriarchal systems which plague modern societies.
spot_img
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
error: