spot_img

Columns

News

ہم تحریکِ انصاف کے ساتھ رابطے بڑھانا اور تلخیاں کم کرنا چاہتے ہیں، مولانا فضل الرحمٰن

تحریک انصاف کے ساتھ رابطے بڑھانا اور تلخیاں کم کرنا چاہتے ہیں، آئینِ پاکستان کی کوئی حیثیت نہیں رہی، پارلیمنٹ کی اہمیت ختم ہو چکی جبکہ جمہوریت اپنا مقدمہ ہار رہی ہے، بات چیت کیلئے اعتماد کی ضرورت ہوتی ہے۔

آئرش وزیراعظم نے فلسطین کو بطور ریاست تسلیم کرنے کا اعلان کر دیا

آئرلینڈ نے فلسطین کو بطور ریاست تسلیم کرنے کا اعلان کر دیا، ناورے اور سپین بھی فلسطین کو بطور ریاست تسلیم کر رہے ہیں جبکہ اسرائیل نے فوری طور پر آئرلینڈ اور ناروے سے اپنے سفیروں کو واپس بلا لیا ہے۔

سینیٹر فیصل واوڈا نے سینیٹ میں جسٹس اطہر من اللّٰہ کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کر دیا

جج اطہر من اللّٰہ نے مجھے پراکسی کہا، ایک جج کیسے یہ جرأت کر سکتا ہے کہ وہ سینیٹر کو پراکسی کہے؟ جج نے ایوان کی توہین کی ہے، میں سینیٹ سے اطہر من اللّٰہ کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کرتا ہوں، سینیٹر فیصل واوڈا۔

عالمی عدالتِ انصاف نے بنجمن نیتن یاہو اور یحییٰ سنوار کے وارنٹ گرفتاری طلب کر لیے

عالمی عدالتِ انصاف (آئی سی سی) نے اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو، اسرائیلی وزیرِ دفاع یوو گیلنٹ اور حماس راہنماؤں یحییٰ سنوار، محمد دیاب المصیری و اسماعیل ہنیہ کے وارنٹ گرفتاری طلب کر لیے۔

ایرانی صدر ابراہیم رئیسی ہیلی کاپٹر حادثے میں جاں بحق ہو گئے

ایرانی صدر ابراہیم رئیسی کا ہیلی کاپٹر ایرانی علاقہ آذربائیجان میں گر کر تباہ، حادثہ میں ایرانی صدر، وزیرِ خارجہ حسین امیر، مشرقی آذربائجان کے گورنر ملک رحمتی اور صوبہ میں ایرانی صدر کے نمائندے آیت اللہ علی سمیت تمام افراد جاں بحق ہو گئے۔
spot_img
Newsroomملک پر ایک کھلنڈرا مسلط کیا گیا جس نے سب سے بڑا...

ملک پر ایک کھلنڈرا مسلط کیا گیا جس نے سب سے بڑا 190 ملین پاؤنڈز کا ڈاکہ ڈالا، نواز شریف

ملک پر ایسا کھلنڈرا مسلط کیا گیا جس نے سب سے بڑا 190 ملین پاؤنڈز کا ڈاکہ ڈالا۔ ہمیں چور چور کہنے والے خود سب سے بڑے چور ثابت ہوئے۔ جو کہتا تھا تمہیں گریبان سے پکڑ کر جیل میں ڈالوں گا آج وہ خود کہاں ہے۔

spot_img

لاہور (تھرسڈے ٹائمز) — پاکستان مسلم لیگ نواز کے سپریم لیڈر میاں نواز شریف نے پارٹی کے پارلیمانی بورڈ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک پر ایک ایسا کھلنڈرا مسلط کیا گیا جو معیشت، سفارتی تعلقات اور معاشرے کی اخلاقیات کے متعلق کچھ نہیں جانتا تھا، وہ ذاتی مفادات کیلئے ریاستِ مدینہ کا نام لیتا تھا اور کرپشن کرتا تھا، جس نے سب سے بڑا 190 ملین پاؤنڈز کا ڈاکہ ڈالا اس کا احتساب ہونا چاہیے۔

میاں نواز شریف نے کہا ہے کہ زندگی میں تکالیف آتی رہتی ہیں لیکن کچھ تکالیف اور زخم ایسے ہوتے ہیں جو کبھی نہیں بھر سکتے، ہم نے ان تکالیف کے باوجود کبھی صبر کا دامن ہاتھ سے نہیں چھوڑا، میں آج تک جھوٹے اور بوگس مقدمات کا سامنا کر رہا ہوں لیکن ہماری اب بھی یہی خواہش ہے کہ پاکستان کو مصائب اور مشکلات کے گرداب سے نکال کر ترقی کی راہ پر گامزن کیا جائے۔

قائدِ مسلم لیگ نواز کا کہنا تھا کہ پاکستان پر ایک ایسا کھلنڈرا مسلط کیا گیا جس کو معیشت، سفارتی تعلقات اور معاشرے کی اخلاقیات سمیت کسی چیز کا بھی علم نہیں تھا، وہ صرف زبانی کلامی ریاستِ مدینہ کا نام لیتا تھا لیکن ریاستِ مدینہ میں کیا ہوتا ہے اور وہ ہمیں کیا سکھاتی ہے اس بارے میں وہ کچھ نہیں جانتا تھا، اس نے ریاستِ مدینہ کا نعرہ صرف سیاسی مفادات کیلئے استعمال کیا اور اب اس کے قصے کہانیاں سب لوگ سن رہے ہیں۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان میں کرپشن کا سب سے بڑا سکینڈل 190 ملین پاؤنڈز کرپشن کا معاملہ ہے، 190 ملین پاؤنڈز کا ڈاکہ مارا گیا اور پھر بند لفافہ لہرا کر دستخط کرائے گئے، کرپشن خود کرتے ہو اور ڈاکے بھی خود مارتے ہو لیکن الزامات ہمارے اوپر لگاتے ہو اور ہمیں سزائیں دلواتے ہو کہ بیٹے سے تنخواہ کیوں نہیں لی، جھوٹے الزامات کی بنیاد پر مجھے، میری بیٹی، میرے بھائی اور میری جماعت کے تمام راہنماؤں کو جیلوں میں ڈلوا دیا، مجھے 7 برس کے بعد اب انصاف ملنا شروع ہوا ہے۔

میاں نواز شریف کا کہنا تھا کہ میرے اوپر مظالم ڈھانے کا آغاز 2016 میں ہوا اور آج تک میں وہ جھوٹے اور بوگس مقدمات بھگت رہا ہوں، جنہوں نے یہ جھوٹے اور بوگس مقدمات بنوائے انہیں کون پوچھے گا؟ جسٹس شوکت عزیز صدیقی بول رہے ہیں کہ جنرل فیض حمید نے انہیں آ کر کہا کہ اگر نواز شریف کو سزا نہ ہوئی تو ہماری دو سالوں کی محنت ضائع ہو جائے گی، ثاقب نثار کی آڈیو سامنے آ چکی ہے کہ نواز شریف کو جیل میں رکھنا ہے اور عمران خان کو اقتدار میں لانا ہے۔

مسلم لیگ نواز کے سپریم لیڈر نے کہا کہ قوم کو یہ ضرور پتہ لگنا چاہیے کہ ہمیں چور چور کہنے والے خود سب سے بڑے چور ہیں، انہوں نے سب سے بڑے ڈاکے ڈال کر قوم کو اس حال تک پہنچا دیا ہے، 190 ملین پاؤنڈز کا ڈاکہ ڈالنے والوں کا احتساب ہونا چاہیے، یہ نہیں ہو سکتا کہ وہ لوگ کرپشن کرتے پھریں مگر انہیں پوچھنے والا کوئی نہ ہو، ایسا نہیں ہو سکتا اور نہ ہی ایسا ہونا چاہیے۔

تین بار پاکستان کے وزیراعظم منتخب ہونے والے میاں نواز شریف نے کہا کہ پاکستان ایک مشکل دور سے گزر رہا ہے اور یہ مشکلات خود پیدا کی گئی ہیں، خود اپنے پیروں پر کلہاڑی ماری گئی ہے، جو ملک کی خدمت کرنے والے تھے انہیں پکڑ کر جیلوں میں ڈالا گیا، انہیں ملک بدر کیا گیا اور انہیں سزائیں دی گئیں جبکہ ملک کے اندر مکروہ کھیل کھیلنے والوں کو ملک و قوم پر مسلط کر دیا گیا، جو دوسروں کو کہتا تھا کہ تمہیں گریبان سے پکڑ کر جیل میں ڈالوں گا اس کو دیکھیں آج وہ کہاں ہے۔

پارٹی ٹکٹ ہولڈرز کو مخاطب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اگر آپ نے سیاست کے میدان میں آنا ہے تو ایک مکمل پروگرام لے کر اس جوش و جذبہ کے ساتھ آنا ہے کہ حلقہ کے عوام کی تقدیر کو بدلنا ہے، اسی طرح یہ معاملہ ضلع سے صوبہ اور پھر پورے ملک تک جاتا ہے، جب نیک نیت کے ساتھ آئیں گے تو انشاءاللّٰه پورے ملک کی تقدیر بدل جائے گی۔

Read more

میاں نواز شریف! یہ ملک بہت بدل چکا ہے

مسلم لیگ ن کے لوگوں پر جب عتاب ٹوٹا تو وہ ’نیویں نیویں‘ ہو کر مزاحمت کے دور میں مفاہمت کا پرچم گیٹ نمبر 4 کے سامنے لہرانے لگے۔ بہت سوں نے وزارتیں سنبھالیں اور سلیوٹ کرنے ’بڑے گھر‘ پہنچ گئے۔ بہت سے لوگ کارکنوں کو کوٹ لکھپت جیل کے باہر مظاہروں سے چوری چھپے منع کرتے رہے۔ بہت سے لوگ مریم نواز کو لیڈر تسیلم کرنے سے منکر رہے اور نواز شریف کی بیٹی کے خلاف سازشوں میں مصروف رہے۔

Celebrity sufferings

Reham Khan details her explosive marriage with Imran Khan and the challenges she endured during this difficult time.

نواز شریف کو سی پیک بنانے کے جرم کی سزا دی گئی

نواز شریف کو ایوانِ اقتدار سے بے دخل کرنے میں اس وقت کی اسٹیبلشمنٹ بھرپور طریقے سے شامل تھی۔ تاریخی شواہد منصہ شہود پر ہیں کہ عمران خان کو برسرِ اقتدار لانے کے لیے جنرل باجوہ اور جنرل فیض حمید نے اہم کردارادا کیا۔

ثاقب نثار کے جرائم

Saqib Nisar, the former Chief Justice of Pakistan, is the "worst judge in Pakistan's history," writes Hammad Hassan.

عمران خان کا ایجنڈا

ہم یہ نہیں چاہتے کہ ملک میں افراتفری انتشار پھیلے مگر عمران خان تمام حدیں کراس کر رہے ہیں۔

لوٹ کے بدھو گھر کو آ رہے ہیں

آستین میں بت چھپائے ان صاحب کو قوم کے حقیقی منتخب نمائندوں نے ان کا زہر نکال کر آئینی طریقے سے حکومت سے نو دو گیارہ کیا تو یہ قوم اور اداروں کی آستین کا سانپ بن گئے اور آٹھ آٹھ آنسو روتے ہوئے ہر کسی پر تین حرف بھیجنے لگے۔

حسن نثار! جواب حاضر ہے

Hammad Hassan pens an open letter to Hassan Nisar, relaying his gripes with the controversial journalist.

#JusticeForWomen

In this essay, Reham Khan discusses the overbearing patriarchal systems which plague modern societies.
spot_img
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
error: