spot_img

Columns

Columns

News

پاک فوج نے جنرل (ر) فیض حمید کے خلاف انکوائری کا آغاز کر دیا

پاک فوج نے سابق ڈائریکٹر جنرل آئی ایس آئی جنرل (ر) فیض حمید کے خلاف نجی ہاوسنگ سوسائٹی کے مالک کی درخواست پر انکوائری کا آغاز کر دیا ہے، جنرل (ر) فیض حمید پر الزام ہے کہ انہوں نے نجی ہاؤسنگ سوسائٹی کے خلاف دورانِ ملازمت اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کیا تھا۔

عمران خان کی حکومت سعودی عرب نے گِرائی تھی، شیر افضل مروت

عمران خان کی حکومت سعودی عرب نے گِرائی تھی، سعودی عرب اور امریکہ دو ممالک تھے جن کے تعاون سے رجیم چینج آپریشن مکمل ہوا، سعودی عرب کی جانب سے پاکستان کیلئے معاشی تعاون بھی اسی پلاننگ کا حصہ ہے۔راہنما تحریکِ انصاف شیر افضل مروت

فیض آباد دھرنا کمیشن ایک مذاق تھا، اس کمیشن کی کوئی وقعت نہیں ہے۔ وزیرِ دفاع خواجہ آصف

جنرل (ر) باجوہ نے مجھے دھمکی دی ہے کہ میں نے باتیں بیان کیں تو ٹانگوں پر کھڑا نہ ہو سکوں گا، جنرل (ر) باجوہ اور جنرل (ر) فیض حمید فیض آباد دھرنا کمیشن میں پیش نہیں ہوئے، فیض آباد دھرنا کمیشن ایک مذاق تھا، اس کمیشن کی کوئی وقعت نہیں ہے۔

سعودی عرب پاکستان کی معاشی ترقی کیلئے اپنا کردار ادا کرے گا، سعودی وزیرِ خارجہ شہزادہ فیصل

سعودی عرب پاکستان کی معاشی ترقی کیلئے اپنا کردار ادا کرے گا، جلد سرمایہ کاری میں پیش رفت ہو گی۔ سعودی وزیرِ خارجہسعودی عرب کی جانب سے بڑی سرمایہ کاری کا خیر مقدم کرتے ہیں، سعودی سرمایہ کاروں کو تمام سہولیات فراہم کی جائیں گی۔ وزیرِ خارجہ اسحاق ڈار

جنرل (ر) باجوہ میرے خلاف ہیروئن کے جعلی کیس میں براہِ راست ملوث تھا، رانا ثناء اللّٰہ

میرے خلاف ہیروئن کے جعلی کیس میں جنرل (ر) قمر جاوید باجوہ براہِ راست ملوث تھا، عمران خان نے پارلیمنٹ کی منظوری کے بغیر اگست میں ہی جنرل (ر) باجوہ کو توسیع دے دی تھی، میاں نواز شریف نے کہا کہ اب محاذ آرائی بےسود ہے۔
Newsroomجھوٹا خط سازش بہانہ تھا، مقصد کارکردگی چھپانا تھا، مریم نواز
spot_img

جھوٹا خط سازش بہانہ تھا، مقصد کارکردگی چھپانا تھا، مریم نواز

عمران خان یہ تمہاری غلاظت ہے اس غلاظت کے ٹوکرے کو افواج پاکستان کیوں اٹھائے یہ تمہاری اپنی غلاظت ہے اسکا ٹوکرا بھی تمہیں خود ہی اٹھانا پڑیگا۔

TT Staff Reporter
TT Staff Reporter
Breaking stories from The Thursday Times' in-house reporter.
spot_img

مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے صوابی میں بڑے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ شکرالحمدللہ کہ شکر الحمدللہ کہ ان جھوٹوں ڈرامے بازوں فتنہ بازوں قومی مجرموں سے پاکستان کی جان چھوٹ گئی اللہ کا شکر ہے پاکستان کو جادو ٹونے کے اڈے کیطرح چلانے والوں سے پاکستان کی جان چھوٹ گئی ہے انکا کہنا تھا کہ جس طرح پاکستان کی جان عمران خان سے چھوٹی ہے اسی طرح آئیندہ الیکشن میں خیبرپختونخواہ کے عوام کی بھی اس سے جان چھوٹنی چاہیے۔

مریم نواز نے کہا کہ جسکا دامن کارکردگی سے خالی ہو جسکا رپورٹ کارڈ کارکردگی سے خالی ہو جسکو عوام کو بتانے کیلئے کچھ نہ ہو تو پھر اسے جھوٹے خط کے ڈرامے اور سازش کا ڈرامہ رچانے کی ضرورت پڑتی ہے انہوں نے مزید کہا کہ تف ہے عمران نیازی جیسے حکمران پر جو چار برس حکومت کرنے کے بعد آج چار سیکنڈ بھی اپنی کارکردگی کے بارے میں بات نہیں کرسکتا۔

مسلم لیگ ن کی نائب صدر نے کہا کہ

سازش تو اک بہانہ تھا

مقصد کارکردگی چھپانا تھا

جھوٹا خط تو اک بہانہ تھا

مقصد کارکردگی چپھانا تھا

مریم نواز نے عمران خان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ عمران نیازی تمہارے لیے اس سے بڑی ذلالت شرمندگی ناکامی کیا ہوگی کہ تمہارے اقتدرا میں ہوتے ہوئے تمہارے اپنے ممبران مسلم لیگ ن سےشیر کا ٹکٹ مانگتے رہے انہوں نے مزید کہا کہ عمران خان یہ ڈرامے بازی اور رونا دھونا بند کرو یہ ڈرامے باز چار برس ہیلی کاپٹر میں یا جھولے لیتا رہا یا سرکاری خرچے پر بنی گالہ کو پالتا رہا اور یا فرح گوگی کے ذریعہ قومی دولت کو لوٹتا رہا یہ وہ ہے جس نے بیت المال اور توشہ خانہ کو بھی نہ بخشا۔

مریم نواز نے کہا کہ عمران کان کان کھول کر سن لو تم سمجھتے ہو کہ اپنی نالائقی اور بری کارکردگی کو سازش کے پردے میں چھپانے کی کوشش کرکے کامیاب ہوجاو گے تو ایسا عوام ہونے نہیں دینگے۔

اس موقع پر ن لیگی نائب صدر کا کہنا تھا کہ ہم سمجھتے رہے کہ پاکستان آئی سی یو میں ہے لیکن اب پتہ چلا کہ پاکستان کو تو عمران خان نے وینٹی لیٹر پر پہنچا دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ میں عوام کو قسم کھا کر بتاتی ہوں حکومت میں آکر پتہ چلا کہ پاکستان کی حالت ایک ایسے درخت جیسی کردی گئی ہے جسکی کوئی جڑ سلامت نہیں عمران خان نےمعیشت کوآخری حد تک تباہ کردیا ہے

مریم نواز نے اس موقع پر کہا کہ جیسے پہلے پاکستان کو ٹھیک کیا تھا اب بھی ان شا اللہ نواز شریف پاکستان کو ٹھیک کرکے دکھائے گا لیکن اب یہ ایک دو مہینہ کا کام نہیں جتنی گڑبڑ عمران خان کرگیا ہے اسکی درست کرنے کیلئے دو تین برس لگیں گے۔

مریم نواز نے اس موقع پرکہا کہ وہ مسلم لیگ ن اور اپوزیش کی جماعتوں کو عوام کو گواہ بنا کر کہنا چاہتی ہوں کہ عمران خان کی بدبودار خراب بری کارگردی کا ٹوکرا اپنے سر پر اٹھانے کی ضرورت نہیں میں مسلم لیگ ن کو کہتی ہوں کہ عمران خان کی بری کارکردگی کے کلنک کے ٹیکے کو اپنے چہرے پر لگانے کی ضرورت نہیں اسکو عوام میں جانے دو۔

انہوں نے اس موقع پر کہا کہ عمران نیازی کی کرسی ہلی ہے تو دماغ بھی ہل گیا ہے کبھی فوج کو کبھی عدلیہ کبھی میڈیا کو کبھی سیاستدانوں کو گالیاں دیتا ہے کہتا ہے کہ یہ میر جعفر صادق ہے جب تک اسکی کرسی رہی تو ادارے اچھے ہوا کرتے تھے اور جب اسکی کرسی کھسکی تو اسکو میر جعفر صادق یاد آگئے۔

مریم نواز نے اس موقع پر عمران خان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان یہ تمہاری غلاظت ہے اس غلاظت کے ٹوکرے کو افواج پاکستان کیوں اٹھائے یہ تمہاری اپنی غلاظت ہے اسکا ٹوکرا بھی تمہیں خود ہی اٹھانا پڑیگا انہوں نے اس موقع پر پختونخواہ کی عوام کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آئیندہ  الیکشن میں پختونخواہ کو سوچ سمجھ کر فیصلہ کرنا پڑیگا کیا پنجاب والی ترقی پختونخواہ کا مقدر نہیں کیا اچھے ہسپتال سکول کالجز یونیورسٹی سڑکیں پختونخواہ کا مقدر نہیں اگر ترقی چاہتے ہیں تو آئیندہ الیکشن میں شیر کو ووٹ دینا ہوگا تاکہ پختونخواہ میں بھی پنجاب جیسی ترقی ہوسکے۔

Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments

Read more

نواز شریف کو سی پیک بنانے کے جرم کی سزا دی گئی

نواز شریف کو ایوانِ اقتدار سے بے دخل کرنے میں اس وقت کی اسٹیبلشمنٹ بھرپور طریقے سے شامل تھی۔ تاریخی شواہد منصہ شہود پر ہیں کہ عمران خان کو برسرِ اقتدار لانے کے لیے جنرل باجوہ اور جنرل فیض حمید نے اہم کردارادا کیا۔

ثاقب نثار کے جرائم

Saqib Nisar, the former Chief Justice of Pakistan, is the "worst judge in Pakistan's history," writes Hammad Hassan.

عمران خان کا ایجنڈا

ہم یہ نہیں چاہتے کہ ملک میں افراتفری انتشار پھیلے مگر عمران خان تمام حدیں کراس کر رہے ہیں۔

لوٹ کے بدھو گھر کو آ رہے ہیں

آستین میں بت چھپائے ان صاحب کو قوم کے حقیقی منتخب نمائندوں نے ان کا زہر نکال کر آئینی طریقے سے حکومت سے نو دو گیارہ کیا تو یہ قوم اور اداروں کی آستین کا سانپ بن گئے اور آٹھ آٹھ آنسو روتے ہوئے ہر کسی پر تین حرف بھیجنے لگے۔

حسن نثار! جواب حاضر ہے

Hammad Hassan pens an open letter to Hassan Nisar, relaying his gripes with the controversial journalist.

#JusticeForWomen

In this essay, Reham Khan discusses the overbearing patriarchal systems which plague modern societies.
error: