29.9 C
Islamabad
Sat, 1 October 2022

اچھے دن آئیں گے

تھرسڈے ٹائمز نیوز لیٹر کو سبسکرائب کیجئے

خبریں اور اداریے براہ راست سب سے پہلے اپنی ای میل میں حاصل کریں۔

Your information will be processed in accordance with our data use policy
- Advertisement -

+ other posts

Want to contribute to The Thursday Times? Get in touch with our submissions team! Email views@thursdaytimes.com

نئی مخلوط حکومت کو آتے ہی پٹرول کی قیمت میں اضافہ کرنا پڑا جس سے عام عوام شدید متاثر ہوئی اور ظاہر ہے سخت ردعمل بھی دے رہی ہے جبکہ یہ سب عمران خان کے عوام دشمن معاہدے کے تحت قیمتوں میں اضافہ کیا گیا جو اس نے آئی ایم ایف سے کئے، اب جبکہ یہ مہنگائی عوام پر لاگو ہوہی چکی ہے تو کچھ بوجھ کیوں نہ اشرافیہ پر بھی ڈالا جائے، جس کے لئے مندرجہ ذیل تجاویز پیش ہیں۔ ملک میں فوری مالیاتی ایمرجنسی کا نفاذ کیا جائے تمام سرکاری محکموں سے اپنے اخراجات 50 فیصد تک کم کرنے کا کہا جائے۔

مفت پٹرول، فری بجلی پر پابندی، گاڑیاں 1300 سی سی سے بڑی سرکاری گاڑیوں کا استعمال فی الفور بند کیا جائے۔ ایک سے زیادہ پروٹوکول یا سیکیورٹی گاڑی پر مکمل پابندی ہو۔ بلیو بک میں درج عہدے داروں کے علاوہ جسے بھی سیکیورٹی درکار ہو وہ خود اخراجات برداشت کرے۔ پولیس سیکیورٹی میں سرکاری گاڑیاں دینا بند کی جائیں، تمام سرکاری دوروں کو محدود کر دیا جائے۔ تمام میٹنگز اور کانفرنسز ورچول کر دی جائیں۔ ٹی اے ڈی اے بند کر دیا جائے۔

تمام ملٹی نیشنل کمپنیز کو دفاتر نیشنل گریڈ سے سولر سسٹم پر مبتقل کرنے کا کہا جائے۔

پڑھیں: ریاست مدینہ کے دعویدار کی سطحی سوچ

گھریلو استعمال کے لیے سولر سسٹم پر بلا سود، آسان اقساط قرضے دیئے جائیں۔ دفتری اوقات دو گھنٹے بڑھا کر تین جمعہ ہفتہ اتوار کی چھٹی کر کے توانائی بچائی جائے۔ اشیائے ضروریہ کی دکانوں کے علاوہ ورکنگ ڈیز میں تمام بازار مغرب کے وقت بند کر دیئے جائیں۔ چھٹی کے تین دنوں میں نیون سائنز بھی بند رکھے جائیں۔

مسلح افواج کے غیر دفاعی اخراجات میں تیس فیصد کمی لائی جائے۔ افسران کی سفری مراعات ختم کر دی جائیں۔ تمام پروٹوکول اور سیکیورٹی گاڑیوں پر پابندی لگائی جائے۔ذاتی استعمال کی گاڑیوں کے اخراجات افسران خود برداشت کریں۔ فوجی اداروں کے کاروبار کو حاصل مراعات کا خاتمہ کیا جائے۔ دوبارہ ملازمت کرنے والوں کی پینشن بند کر دی جائے۔

تمام وزراء اور پارلیمنٹیزینز کی تنخواہ اور تمام مراعات بشمول ٹی اے ڈی اے فوری بند کر دی جائیں۔ کوئی بھی وزیر یا پھرپارلیمان کا ممبر بیان حلفی دے کر مراعات لے سکے اگر اُسے ضرورت ہے۔

صدر، وزیراعظم، گورنر، وزرائے اعلی، تمام صوبائی اور وفاقی کابینہ کا بجٹ نصف کیا جائے۔

اشرافیہ کی عیاشیوں کو نظر انداز کر کے، تمام بوجھ عوام کو منتقل کرنا، سراسر عوام اور ملک دشمنی ہے،اس لئے عوامی مطالبات پر غور کیا جائے تو یقینا عوام بھی اس مشکل وقت میں حکومت کے ساتھ کھڑی ہو کر یہ وقت بھی گزار لے گی، اس امید کے ساتھ کہ اچھے دن آئیں گے۔


The contributor, Shabana Shaukat, writes for digests and magazines nationally.

Reach out to her @Shabanashaukat4.

- Advertisement -

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here
This site is protected by reCAPTCHA and the Google Privacy Policy and Terms of Service apply.

RELATED ARTICLES

FRESH OFF THE PRESS

ٹرمپ کے گھر چھاپہ کی طرز پر بنی گالہ پر بھی چھاپہ مار کر سائفر برآمد کیا جائے، مریم نواز

جن لوگوں نے عمران خان کے کہنے پر ایبسلیوٹلی ناٹ کے اسٹیکرز لگائے ہوئے تھے انہیں اب عمران خان سے پوچھنا چاہیے اب ان اسٹیکرز کا کیا کرنا ہے

ملک ایک ناہنجار، نااہل اورغدار کے ہاتھوں گروی رکھا گیا، مریم نواز

ن لیگی نائب صدر نے مزید لکھا کہ اگر آج ہر طرح کا سنگین جرم ثابت ہونے کے بعد بھی اس غدار عمران کو عبرت کا نشان نہیں بنایا جاتا تو پھر ملک کی تباہی کا ذمہ دار ہم سب کو سمجھا جائے گا۔

اسحاق ڈار کی واپسی

سینیٹر اسحاق ڈار کی فوری ملک واپسی ہورہی ہے اور وہ آئیندہ چند دنوں میں ملک کے نئے وزیرخزانہ کا حلف اٹھانے جارہے ہیں۔

نظام کی تبدیلی یا سوچ کی تبدیلی

ہم پچھتر سال کے سود و خسارے کا حساب لگانے بیٹھیں تو خسارے کا تناسب سود سے زیادہ ہی ہو گا اور بتدریج یہ خسارہ بڑھتا ہی چلا جا رہا ہے۔

سیلاب، دہشتگردی، اسلاموفوبیا، بھارتی مسلمانوں پر ظلم، شہباز شریف کا اقوام متحدہ میں خطاب

وزیراعظم شہباز شریف نے اقوام متحدہ جنرل اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میں یہاں پر پاکستان پر آئی اس بڑی آفت بارے خود آپ کو بتانے آیا ہوں جس آفت کی وجہ سے پاکستان ایک تہائی پانی کے نیچے ہے۔

عمران خان کا ایجنڈا

ہم یہ نہیں چاہتے کہ ملک میں افراتفری انتشار پھیلے مگر عمران خان تمام حدیں کراس کر رہے ہیں۔

ہم نازک دور سے گزر رہے ہیں

جب سے ہوش سنبھالا ہے ہمیشہ یہی سنا ہے کہ "پاکستان تاریخ کے نازک ترین دور سے گزر رہا ہے۔" پھر جب پڑھنے پڑھانے سے واسطہ پڑا تو پتہ چلا کہ ہمارے والدین نے بھی ایسے ہی دور میں ہوش سنبھالا تھا جب "پاکستان تاریخ کے نازک ترین دور سے گزر رہا تھا۔"

مہنگائی کا جن بوتل میں بند کیا جاسکتا ہے، اسحاق ڈار

مسلم لیگ ن کے رہنما سابق وزیرخزانہ سینیٹر اسحاق ڈار کا کہنا ہے کہ بجائےاسکے ہمارا سارا فوکس معیشت مہنگائی پر ہو ہم ایکسٹینشن جیسی چیزوں میں الجھے ہوئے ہیں جس پر اتنا وقت صرف کرنے کی ضرورت ہی نہیں ہے کہ ایکسٹینشن دینی ہے نہیں دینی مانگی جائیگی یا نہیں یہ ساری ذمہ داری حکومت کی ہے جب وقت آئیگا حکومت فیصلہ کر لے گی

لز ٹرس برطانیہ کی تیسری خاتون وزیراعظم بننے جارہی ہیں

لزٹرس نے برطانوی ٹوری جماعت کی قیادت کا مقابلہ جیت لیا ہے اور وہ اب ٹوری پارٹی کی نئی رہنما اور اگلی برطانوی وزیراعظم ہونگی لز ٹرس نے ٹوری پارٹی کی قیادت کیلئے رشی سوناک کو شکست دے دی ہے۔

آئی ایم ایف رپورٹ تحریک انصاف حکومت کیخلاف کھلی چارج شیٹ ہے، اسحاق ڈار

پاکستان کی تاریخ میں میں آئی ایم ایف کا پروگرام صرف ایک مرتبہ کامیابی سے مکمل ہوا جو میاں نواز شریف کی آخری حکومت میں بطور وزیرخزانہ اسحاق ڈار نے کیا تھا