Columns

News

تحریکِ انصاف نے آئی ایم ایف کو خط لکھ دیا، نیوز ایجنسی رائٹرز

تحریکِ انصاف نے آئی ایم ایف کو خط لکھ کر پاکستان کے ساتھ معاہدہ کو عام انتخابات میں دھاندلی کی تحقیقات اور سیاسی استحکام سے مشروط کرنے کا مطالبہ کر دیا۔

بینک آف امریکا نے پاکستان کے ڈالر بانڈز کا درجہ بڑھا کر ہیوی ویٹ کرنے کی تجویز دے دی، جریدہ بلومبرگ

بینک آف امریکا نے پاکستان کا درجہ مارکیٹ ویٹ سے بڑھا کر ہیوی ویٹ کرنے کے تجویز دے دی، پاکستان میں عام انتخابات نے سیاسی بےیقینی کو کم کیا جس سے پاکستان کے ڈالر بانڈز میں عالمی سرمایہ کاروں کی دلچسپی میں اضافہ ہوا ہے۔

عمران خان اور بشریٰ بی بی پر 190 ملین پاؤنڈز کرپشن کیس میں فردِ جرم عائد کر دی گئی

اڈیالہ جیل راولپنڈی میں احتساب عدالت نے 190 ملین پاؤنڈز کرپشن کیس میں سابق چیئرمین تحریکِ انصاف عمران خان اور ان کی اہلیہ بشریٰ بی بی پر فردِ جرم عائد کر دی، ملزمان کا صحتِ جرم سے انکار، سماعت 6 مارچ تک ملتوی کر دی گئی۔

قومی اسمبلی کا اجلاس 29 فروری کو صبح 10 بجے ہو گا

صدر عارف علوی کے انکار کے بعد قومی اسبملی سیکرٹریٹ نے قومی اسمبلی کا اجلاس 29 فروری کو صبح 10 بجے بلا لیا۔

مریم نواز شریف پنجاب کی پہلی خاتون وزیرِ اعلٰی منتخب ہو گئیں

رف مسلم لیگ (ن) کی وزیرِ اعلٰی نہیں ہوں بلکہ پنجاب کے 12 کروڑ عوام کی وزیرِ اعلٰی ہوں، میرے دل میں کسی کیلئے انتقام کا جذبہ نہیں ہے، مجھے اس میں آپ سب کا ساتھ چاہیے، انشاءاللّٰه ہم ایک بہتر پنجاب بنائیں گے۔
Newsroomلوگوں کی بہن بیٹیوں کو جیل کے خوف سے اپنی حفاظت پر...

لوگوں کی بہن بیٹیوں کو جیل کے خوف سے اپنی حفاظت پر لگانے والا لیڈر نہیں گیدڑ ہوتا ہے، مریم نواز

عمران خان کیخلاف ٹھوس ثبوت موجود ہیں یہ جیل کے خوف سے چھپ کر گھر کے اندر بیٹھے ہوئے ہیں اور لوگوں کی بہن بیٹیوں کو باہر اپنی حفاظت کیلئے کھڑا کیا ہوا ہے یہ ہے فرق ایک لیڈر اور گیدڑ میں۔

spot_img

مسلم لیگ ن کی سینئر نائب صدر اور چیف آرگنائزر مریم نواز نے کہا ہے کہ اس اس سے بڑی بزدلی کیا ہوگی کہ پہلے اپنے ورکرز اور پارٹی اراکین کو کہتے رہے جیلیں بھرو اور خود گھر بیٹھے رہے انکا لیڈر گیدڑ ثابت ہوا ہے یہ بات مریم نواز نے ٹی وی پروگرام میں بات کرتے ہوئے کہی۔

مریم نواز نے اس موقع پر کہا کہ مسلم لیگ وہ واحد جماعت ہے جس نے الیکشن کی بھرپور تیاری شروع کردی ہوئی ہے ہم اپنے امیدواروں کے نام فائنل کررہے ہیں ہم الیکشن سے نہیں ڈرتے لیکن اس سے پہلے کچھ فیصلے ہونا باقی ہیں۔

رہنما ن لیگ کا کہنا تھا کہ  نواز شریف کا مقابلہ کیسے اس شخص سے کیا جارہا ہے جس نے ایک دن بھی جیل نہیں کاٹی نواز شریف تو ایک بہادر آدمی ہے جس نے دترین انتقام کے باوجود انہوں نے قید کاٹی پہلے اڈیالہ جیل رکھا گیا پھر لاہور جیل میں رکھا گیا اور پھر نیب اٹھا کر لے گئی۔

چیف آرگنائزر ن لیگ نے مزید کہا کہ عمران خان کے  کیسز اقامہ والےبیٹے سے تنخواہ نہ لینے والے نہیں بلکہ انہوں نے اپنی بیٹی چھپائی ہےقوم سے جھوٹ بولتے رہےجھوٹ بول کر الیکشن فارمزجمع کروائے190ملین پاونڈ پراپرٹی ٹائیکون کی جیب میں ڈالا انہوں نےاوربیگم نے توشہ خانہ تحائف بیچ کرپیسے بنائے۔

اس موقع پر مریم نواز نے کہا کہ عمران خان کیخلاف ٹھوس ثبوت موجود ہیں کیا یہ ایک دن بھی جیل گئے یہ جیل کے خوف سے چھپ کر اندر بیٹھے ہوتے ہیں اور لوگوں کی بہن بیٹیوں کو باہر اپنی حفاظت کیلئے کھڑا کیا ہوا ہے یہ ہے فرق ایک لیڈر اور گیدڑمیں۔

سینئر نائب صدر ن لیگ نے کہا کہ ہمیں تو انوسٹی گیشن اسٹیج پر ہی گرفتارکرلیا جاتامجھے جب دوبارہ گرفتار کیا گیا میں نے تو کبھی پبلک آفس بھی ہولڈ نہیں کیا تھا مجھے چار ماہ جیل اور57 دن نیب کی قید میں رکھاگیاجھوٹےکیسز میں ہماری ہفتہ میں 6دن پیشیاں ہوتی تھیں اور اسکی مرتبہ تو ایسا کچھ نہیں ہوتا۔

مریم نواز نے انکشاف کیا کہ میرے پاس جنرل فیض کی انوالومنٹ کے ثبوت ہیں اور میں نے جنرل فیض حمید کا اسوقت نام لیا تھا جب وہ حاضر سروس تھے اس بزدل خان کی طرح نہیں کہ جب چیف چلا گیا تو اسکے کورٹ مارشل کی باتیں کرتا ہے۔

ایک سوال کے جواب میں مریم نواز نے اینکر سے کہا کہ  آپکو ایمانداری سے بات کرنا چاہیے نواز شریف ن لیگ اور اسکے کیسز میں فرق ہے مجھے جس کیس بے گناہ قید رکھا گیا وہ میرے آٹھ ماہ واپس کریں لیکن کیا فارن فنڈنگ توشہ خانہ چوری اصل نہیں ابھی تو انکو کسی نے انگلی نہیں لگائی انکے تو دو دن میں رونے نکل گئے ہیں۔

چیف آرگنائزر ن لیگ نے کہا کہ ایک شخص جو ملک میں فتنہ و انتشار پیدا کررہا ہے اس میں اور نواز شریف میں بہت فرق ہے ملک کو اسوقت سیاسی استحکام کی ضرورت ہے جو فتنہ و انتشار کی سیاست کرتا ہو اسکی صرف تقاریر پر ہی نہیں بلکہ سیاست پر بھی پابندی لگنی چاہیے۔

مریم نواز نے کہا کہ کون سا دنیا کا مہذب ملک  جو کھلے عام اس چیز کی اجازت دیتا ہے کہ ایک شخص نے بندر کی طرح ہاتھ میں ماچس پکڑی ہو اور وہ ہر چیز کو آگ لگانے پر تلا ہو اور ریاست چپ کر کے اسکا تماشہ دیکھتی رہے۔

اس موقع پر مریم نواز نے مزید کہا کہ جب کوئی عوامی لیڈر ہوتا ہے اسے اسٹیبلشمنٹ ملکر باہر نکالتی ہے تو اسے ہرانے کیلئے تمام حربوں کےباوجود آر ٹی ایس بٹھانا پڑتا ہے لیکن وہ لیڈرجو جنرل پاشااور ظہیر الاسلام کی پیداوار ہےجسکوجنرل فیض نے کندھوں پر اٹھا کر چلایا ہووہ عوامی لیڈر کیسے ہوسکتا ہے۔

مریم نواز نے کہا کہ میں نہیں چاہتی کسی کو سیاست سے آوٹ کیا جائے چاہتی ہوں قانون اپنا راستہ لےاگر عوامی منتخب وزیراعظم کو انتقام کی بنیاد پر سیاست سے باہر نکال دیا گیا تو دوسری جانب ایسا شخص جسکے ہاتھ جرم سےرنگے ہوں وہ کیوں دندناتا پھرے اسکے جرائم پر قانون حرکت میں آنا چاہیے۔

Read more

میاں نواز شریف! یہ ملک بہت بدل چکا ہے

مسلم لیگ ن کے لوگوں پر جب عتاب ٹوٹا تو وہ ’نیویں نیویں‘ ہو کر مزاحمت کے دور میں مفاہمت کا پرچم گیٹ نمبر 4 کے سامنے لہرانے لگے۔ بہت سوں نے وزارتیں سنبھالیں اور سلیوٹ کرنے ’بڑے گھر‘ پہنچ گئے۔ بہت سے لوگ کارکنوں کو کوٹ لکھپت جیل کے باہر مظاہروں سے چوری چھپے منع کرتے رہے۔ بہت سے لوگ مریم نواز کو لیڈر تسیلم کرنے سے منکر رہے اور نواز شریف کی بیٹی کے خلاف سازشوں میں مصروف رہے۔

Celebrity sufferings

Reham Khan details her explosive marriage with Imran Khan and the challenges she endured during this difficult time.

نواز شریف کو سی پیک بنانے کے جرم کی سزا دی گئی

نواز شریف کو ایوانِ اقتدار سے بے دخل کرنے میں اس وقت کی اسٹیبلشمنٹ بھرپور طریقے سے شامل تھی۔ تاریخی شواہد منصہ شہود پر ہیں کہ عمران خان کو برسرِ اقتدار لانے کے لیے جنرل باجوہ اور جنرل فیض حمید نے اہم کردارادا کیا۔

ثاقب نثار کے جرائم

Saqib Nisar, the former Chief Justice of Pakistan, is the "worst judge in Pakistan's history," writes Hammad Hassan.

عمران خان کا ایجنڈا

ہم یہ نہیں چاہتے کہ ملک میں افراتفری انتشار پھیلے مگر عمران خان تمام حدیں کراس کر رہے ہیں۔

لوٹ کے بدھو گھر کو آ رہے ہیں

آستین میں بت چھپائے ان صاحب کو قوم کے حقیقی منتخب نمائندوں نے ان کا زہر نکال کر آئینی طریقے سے حکومت سے نو دو گیارہ کیا تو یہ قوم اور اداروں کی آستین کا سانپ بن گئے اور آٹھ آٹھ آنسو روتے ہوئے ہر کسی پر تین حرف بھیجنے لگے۔

حسن نثار! جواب حاضر ہے

Hammad Hassan pens an open letter to Hassan Nisar, relaying his gripes with the controversial journalist.

#JusticeForWomen

In this essay, Reham Khan discusses the overbearing patriarchal systems which plague modern societies.
spot_img
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
error: