spot_img

Columns

News

تورطت المملكة العربية السعودية في مؤامرة للإطاحة بحكومة رئيس الوزراء السابق عمران خان، كما يزعم أحد المقربين من عمران خان

لقد أطاحت المملكة العربية السعودية بحكومة عمران خان، وكانت المملكة العربية السعودية والولايات المتحدة هما الدولتان اللتان اكتملت بدعمهما عملية تغيير النظام. كما أن الدعم الاقتصادي الذي تقدمه المملكة العربية السعودية لباكستان هو أيضًا جزء من نفس التخطيط، شير أفضل مروات۔

Pakistan grants 34 firms licenses to develop electric vehicles for its domestic market

Pakistan's Engineering Development Board has granted 34 licenses for electric vehicle manufacturing under its 2020-2025 policy, aiming to equip petrol stations with EV chargers and leverage global climate funds to promote clean transportation.

پاک فوج نے جنرل (ر) فیض حمید کے خلاف انکوائری کا آغاز کر دیا

پاک فوج نے سابق ڈائریکٹر جنرل آئی ایس آئی جنرل (ر) فیض حمید کے خلاف نجی ہاوسنگ سوسائٹی کے مالک کی درخواست پر انکوائری کا آغاز کر دیا ہے، جنرل (ر) فیض حمید پر الزام ہے کہ انہوں نے نجی ہاؤسنگ سوسائٹی کے خلاف دورانِ ملازمت اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کیا تھا۔

عمران خان کی حکومت سعودی عرب نے گِرائی تھی، شیر افضل مروت

عمران خان کی حکومت سعودی عرب نے گِرائی تھی، سعودی عرب اور امریکہ دو ممالک تھے جن کے تعاون سے رجیم چینج آپریشن مکمل ہوا، سعودی عرب کی جانب سے پاکستان کیلئے معاشی تعاون بھی اسی پلاننگ کا حصہ ہے۔راہنما تحریکِ انصاف شیر افضل مروت
spot_img
SportsCricketبھارت نے نیوزی لینڈ کے خلاف سیمی فائنل سے قبل پچ کو...

بھارت نے نیوزی لینڈ کے خلاف سیمی فائنل سے قبل پچ کو تبدیل کیا، برطانوی اخبار کا دعویٰ

بھارت نے نیوزی لینڈ کے خلاف ورلڈ کپ کے سیمی فائنل سے قبل ممبئی گراونڈ میں پچ کو تبدیل کیا، انٹرنیشنل کرکٹ کونسل اس معاملہ پر خاموشی کیے ہوئے ہے، ایسا چلتا رہا تو بین الاقوامی کرکٹ تباہ ہو جائے گی۔

spot_img

لندن/ممبئی (تھرسڈے ٹائمز) — برطانوی اخبار ”ڈیلی میل“ نے بھارت پر یہ سنگین الزام عائد کیا ہے کہ آج ہونے والے کرکٹ ورلڈ کپ کے سیمی فائنل سے قبل بھارت نے پچ کو تبدیل کیا ہے۔

ڈیلی میل نے لکھا ہے کہ اب ”بگ تھری“ کو فراموش کر دینا چاہیے کیونکہ اب کرکٹ میں صرف ”بگ ون“ ہے، اب عالمی کرکٹ پر صرف انڈیا کی گرفت ہے جبکہ باقی دنیا اپنے اختیارات اور حقوق کھو چکی ہے۔

برطانوی اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ انگلینڈ اور آسٹریلیا عالمی کرکٹ میں یقینی طور پر اچھی پوزیشن رکھتے ہیں اور دونوں مالی طور پر بھی مستحکم ہیں مگر اس کے باوجود بھارتی حکام بدھ کو ممبئی میں بھارت اور نیوزی لینڈ کے مابین کھیلے جانے والے سیمی فائنل سے قبل پچ کو تبدیل کرانے میں کامیاب ہوئے ہیں اور انہیں کوئی بھی روکنے کیلئے آگے نہیں بڑھا۔

ڈیلی میل کے مطابق کرکٹ کے کسی بھی ایونٹ میں میزبان کیلئے لازم ہے کہ وہ انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کے پچ کنسلٹنٹ اینڈی ایٹکنسن کو کسی خوف اور دباؤ کے بغیر اپنا کام کرنے کی اجازت دے اور کھیل کا میدان بہرصورت ہر ممکن حد تک موزوں اور غیر متنازع ہونا چاہیے۔

کرکٹ ورلڈ کپ کا سیمی فائنل ایک ایسی پچ پر ہو رہا ہے جو پہلے ہی دو بار استعمال ہو چکی ہے تاہم بھارت کے سپنرز کو فائدہ پہنچانے کیلئے اس کو تبدیل کیا گیا ہے، نیوزی لینڈ کے پاس ایک ورلڈ کلاس سپنر مچل سینٹنر موجود ہے جو میگا ایونٹ میں 16 وکٹس لے چکا ہے لیکن ان کے دیگر دو سپنرز گلین فلپس اور رچن رویندرا مستقل طور پر استعمال کیے جانے والے گیند باز نہیں ہیں بلکہ وہ پارٹ ٹائم کے طور پر گیند بازی کرتے ہیں۔

تبدیل شدہ پچ پر بھارتی بلے بازوں کیلئے نیوزی لینڈ کے پیسرز کا مقابلہ کرنا نسبتاً آسان ہو گا جبکہ بھارت کے پاس بائیں ہاتھ سے گیند بازی کرنے والے رویندرا جدیجا اور بائیں ہاتھ کے سپنر کلدیپ یادیو اس پچ پر زیادہ خطرناک ہو سکتے ہیں جبکہ دونوں بالترتیب 16 اور 14 وکٹس حاصل کر چکے ہیں۔

ڈیلی میل کے مطابق انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) اس معاملہ میں کچھ بھی کرنے سے قاصر ہے کیونکہ آئی سی سی ایک سراب ہے اور یہ صرف ایک ایونٹ مینیجمینٹ کمپنی ہے، بھارت میگا ایونٹ میں بینک رول کا کردار ادا کر رہا ہے، انڈیا سب کچھ اپنی صوابدید پر استعمال کر رہا ہے کیونکہ ذمہ داری کا دارومدار طاقت پر ہے۔

برطانوی اخبار کے مطابق یہ رائے مضحکہ خیز اور افسوسناک ہے کہ چونکہ پہلے انگلینڈ اور آسٹریلیا کرکٹ کو اپنی مرضی کے مطابق چلاتے تھے لہذا اب بھارت بھی ایسا کر سکتا ہے جبکہ یہ کہنا کہ بھارتی کرکٹ بورڈ پر تنقید کی وجہ حسد ہے، بحث ختم کرنے کا ایک غلط اور بےبنیاد مؤقف ہے، دراصل کوئی بھی بھارتی کرکٹ بورڈ کے خلاف آواز نہیں اٹھا رہا کیونکہ ہر کوئی وہ ہاتھ کاٹنے سے ڈرتا ہے جو اس کو کھلا رہا ہے۔

ڈیلی میل نے لکھا ہے کہ انھی وجوہات کی بناء پر انڈین پریمیئر لیگ ایونٹ بھی نان سٹاپ انداز میں ترقی کر رہا ہے جبکہ اس کا اثر و رسوخ اب دیگر ممالک میں ہونے والے ایسے ایونٹس میں بھی نظر آتا ہے جہاں IPL مالکان کی ٹیمیں باقاعدگی کے ساتھ شامل ہوتی ہیں، ہم شاید اس وقت سے چند برس دور ہیں جب کھلاڑی اپنے ہوم بورڈز کی بجائے ممبئی انڈینز اور چنئی سپر کنگز کے ساتھ 12 ماہ کے معاہدوں پر دستخط کریں گے جبکہ بین الاقوامی کرکٹ ایک طرح سے ختم ہو کر صرف ٹیسٹ سیریز اور ورلڈ کپ تک محدود ہو جائے گی۔

یہ بھی یاد رکھیں کہ بھارتی کرکٹ بورڈ نے اپنے کھلاڑیوں کو انڈین پریمیئر لیگ کے علاوہ ٹی ٹوئنٹی کے کسی بھی ڈومیسٹک ٹورنامنٹ میں حصہ لینے سے منع کر رکھا ہے، بھارت یہ طاقت رکھتا ہے کہ اگر وہ چاہے تو اس بات کو یقینی بنا سکتا ہے کہ بین الاقوامی کرکٹ ترقی حاصل کرے مگر ابھی ٹریفک صرف ایک ہی سمت میں رواں ہے۔

ڈیلی میل کے مطابق انڈیا کو پچز تبدیل کرنے کی بجائے اپنی قابلیت کی بنیاد پر نیوزی لینڈ کو ہرانا چاہیے، پھر چاہے میچ شیشے کی کسی شیٹ پر کھیلا جا رہا ہوں یا چاند کی سطح پر، انڈیا کو صرف اپنی قابلیت پر توجہ دینی چاہیے۔

Read more

میاں نواز شریف! یہ ملک بہت بدل چکا ہے

مسلم لیگ ن کے لوگوں پر جب عتاب ٹوٹا تو وہ ’نیویں نیویں‘ ہو کر مزاحمت کے دور میں مفاہمت کا پرچم گیٹ نمبر 4 کے سامنے لہرانے لگے۔ بہت سوں نے وزارتیں سنبھالیں اور سلیوٹ کرنے ’بڑے گھر‘ پہنچ گئے۔ بہت سے لوگ کارکنوں کو کوٹ لکھپت جیل کے باہر مظاہروں سے چوری چھپے منع کرتے رہے۔ بہت سے لوگ مریم نواز کو لیڈر تسیلم کرنے سے منکر رہے اور نواز شریف کی بیٹی کے خلاف سازشوں میں مصروف رہے۔

Celebrity sufferings

Reham Khan details her explosive marriage with Imran Khan and the challenges she endured during this difficult time.

نواز شریف کو سی پیک بنانے کے جرم کی سزا دی گئی

نواز شریف کو ایوانِ اقتدار سے بے دخل کرنے میں اس وقت کی اسٹیبلشمنٹ بھرپور طریقے سے شامل تھی۔ تاریخی شواہد منصہ شہود پر ہیں کہ عمران خان کو برسرِ اقتدار لانے کے لیے جنرل باجوہ اور جنرل فیض حمید نے اہم کردارادا کیا۔

ثاقب نثار کے جرائم

Saqib Nisar, the former Chief Justice of Pakistan, is the "worst judge in Pakistan's history," writes Hammad Hassan.

عمران خان کا ایجنڈا

ہم یہ نہیں چاہتے کہ ملک میں افراتفری انتشار پھیلے مگر عمران خان تمام حدیں کراس کر رہے ہیں۔

لوٹ کے بدھو گھر کو آ رہے ہیں

آستین میں بت چھپائے ان صاحب کو قوم کے حقیقی منتخب نمائندوں نے ان کا زہر نکال کر آئینی طریقے سے حکومت سے نو دو گیارہ کیا تو یہ قوم اور اداروں کی آستین کا سانپ بن گئے اور آٹھ آٹھ آنسو روتے ہوئے ہر کسی پر تین حرف بھیجنے لگے۔

حسن نثار! جواب حاضر ہے

Hammad Hassan pens an open letter to Hassan Nisar, relaying his gripes with the controversial journalist.

#JusticeForWomen

In this essay, Reham Khan discusses the overbearing patriarchal systems which plague modern societies.
spot_img
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
error: